Skip to main content

اِنَّمَا سُلْطٰنُهٗ عَلَى الَّذِيْنَ يَتَوَلَّوْنَهٗ وَالَّذِيْنَ هُمْ بِهٖ مُشْرِكُوْنَ

إِنَّمَا
بیشک
سُلْطَٰنُهُۥ
اس کا زور
عَلَى
پر
ٱلَّذِينَ
ان لوگوں پر ہے
يَتَوَلَّوْنَهُۥ
جو دوستی کرتے ہیں اس سے
وَٱلَّذِينَ
اور وہ لوگ
هُم
وہ
بِهِۦ
ساتھ اس کے
مُشْرِكُونَ
شرک کرنے والے ہیں

تفسیر کمالین شرح اردو تفسیر جلالین:

اس کا زور تو انہی لوگوں پر چلتا ہے جو اس کو اپنا سرپرست بناتے اور اس کے بہکانے سے شرک کرتے ہیں

ابوالاعلی مودودی Abul A'ala Maududi

اس کا زور تو انہی لوگوں پر چلتا ہے جو اس کو اپنا سرپرست بناتے اور اس کے بہکانے سے شرک کرتے ہیں

احمد رضا خان Ahmed Raza Khan

اس کا قابو تو انہیں پر ہے جو اس سے دوستی کرتے ہیں اور اسے شریک ٹھہراتے ہیں،

احمد علی Ahmed Ali

اس کا زور تو انہیں پر ہے جو اسے دوست بناتے ہیں اور جو الله کے ساتھ شریک مانتے ہیں

أحسن البيان Ahsanul Bayan

ہاں اس کا غلبہ ان پر تو یقیناً ہے جو اسی سے رفاقت کریں اور اسے اللہ کا شریک ٹھہرائیں۔

جالندہری Fateh Muhammad Jalandhry

اس کا زور ان ہی لوگوں پر چلتا ہے جو اس کو رفیق بناتے ہیں اور اس کے (وسوسے کے) سبب (خدا کے ساتھ) شریک مقرر کرتے ہیں

محمد جوناگڑھی Muhammad Junagarhi

ہاں اس کا غلبہ ان پر تو یقیناً ہے جو اسی سے رفاقت کریں اور اسے اللہ کا شریک ٹھہرائیں

محمد حسین نجفی Muhammad Hussain Najafi

اس کا قابو تو صرف ان لوگوں پر چلتا ہے جو اسے اپنا دوست بناتے ہیں اور اس کی وجہ سے شرک کرتے ہیں۔

علامہ جوادی Syed Zeeshan Haitemer Jawadi

اس کا غلبہ صرف ان لوگوں پر ہوتا ہے جو اسے سرپرست بناتے ہیں اور اللہ کے بارے میں شرک کرنے والے ہیں

طاہر القادری Tahir ul Qadri

بس اس کا غلبہ صرف انہی لوگوں پر ہے جو اسے دوست بناتے ہیں اور جو اللہ کے ساتھ شرک کرنے والے ہیں،