Skip to main content
ARBNDEENIDTRUR
bismillah

الٓمّٓ ۚ

ا ل م

تفسير

غُلِبَتِ الرُّوْمُۙ

غُلِبَتِ الرُّوْمُ
مغلوب ہوگئے رومی

رومی قریب کی سرزمین میں مغلوب ہو گئے ہیں

تفسير

فِىْۤ اَدْنَى الْاَرْضِ وَهُمْ مِّنْۢ بَعْدِ غَلَبِهِمْ سَيَغْلِبُوْنَۙ

فِيْٓ اَدْنَى الْاَرْضِ
قریب کی زمین میں
وَهُمْ
اور وہ
مِّنْۢ
سے
بَعْدِ غَلَبِهِمْ
اپنی مغلوبیت کے بعد
سَيَغْلِبُوْنَ
عنقریب وہ غالب آجائیں گے

اور اپنی اِس مغلوبیت کے بعد چند سال کے اندر وہ غالب ہو جائیں گے

تفسير

فِىْ بِضْعِ سِنِيْنَ ۗ لِلّٰهِ الْاَمْرُ مِنْ قَبْلُ وَمِنْۢ بَعْدُ ۗ وَيَوْمَٮِٕذٍ يَّفْرَحُ الْمُؤْمِنُوْنَ ۙ

لِلّٰهِ
اختیار
الْاَمْرُ
اس سے پہلے
مِنْ قَبْلُ
اور اس کے بعد
وَمِنْۢ بَعْدُ ۭ
اور اس دن
وَيَوْمَىِٕذٍ
خوش ہوجائیں گے
يَّفْرَحُ
مومن
الْمُؤْمِنُوْنَ
مومن

اللہ ہی کا اختیار ہے پہلے بھی اور بعد میں بھی اور وہ دن وہ ہو گا جبکہ اللہ کی بخشی ہوئی فتح پر مسلمان خوشیاں منائیں گے

تفسير

بِنَصْرِ اللّٰهِۗ يَنْصُرُ مَنْ يَّشَاۤءُ ۗ وَهُوَ الْعَزِيْزُ الرَّحِيْمُۙ

يَنْصُرُ
جس کی چاہتا ہے
مَنْ يَّشَاۗءُ ۭ
اور وہ زبردست ہے
وَهُوَ الْعَزِيْزُ
رحم فرمانے والا ہے
الرَّحِيْمُ
رحم فرمانے والا ہے

اللہ نصرت عطا فرماتا ہے جسے چاہتا ہے، اور وہ زبردست اور رحیم ہے

تفسير

وَعْدَ اللّٰهِۗ لَا يُخْلِفُ اللّٰهُ وَعْدَهٗ وَلٰـكِنَّ اَكْثَرَ النَّاسِ لَا يَعْلَمُوْنَ

لَا يُخْلِفُ اللّٰهُ
اپنے وعدے کو
وَعْدَهٗ
لیکن
وَلٰكِنَّ
اکثر لوگ
اَكْثَرَ النَّاسِ
نہیں جانتے
لَا يَعْلَمُوْنَ
نہیں جانتے

یہ وعدہ اللہ نے کیا ہے، اللہ کبھی اپنے وعدے کی خلاف ورزی نہیں کرتا، مگر اکثر لوگ نہیں جانتے ہیں

تفسير

يَعْلَمُوْنَ ظَاهِرًا مِّنَ الْحَيٰوةِ الدُّنْيَا ۖ وَهُمْ عَنِ الْاٰخِرَةِ هُمْ غٰفِلُوْنَ

يَعْلَمُوْنَ
وہ جانتے ہیں
ظَاهِرًا
ظاہری پہلو
مِّنَ
سے
الْحَيٰوةِ الدُّنْيَا ښ
دنیا کی زندگی کا
وَهُمْ
اور وہ
عَنِ الْاٰخِرَةِ
آخرت سے
هُمْ غٰفِلُوْنَ
وہ غافل ہیں

لوگ دُنیا کی زندگی کا بس ظاہری پہلو جانتے ہیں اور آخرت سے وہ خود ہی غافل ہیں

تفسير

اَوَلَمْ يَتَفَكَّرُوْا فِىْۤ اَنْفُسِهِمْۗ مَا خَلَقَ اللّٰهُ السَّمٰوٰتِ وَالْاَرْضَ وَمَا بَيْنَهُمَاۤ اِلَّا بِالْحَقِّ وَاَجَلٍ مُّسَمًّىۗ وَ اِنَّ كَثِيْرًا مِّنَ النَّاسِ بِلِقَاۤئِ رَبِّهِمْ لَـكٰفِرُوْنَ

اَوَلَمْ
کیا بھلا نہیں
يَتَفَكَّرُوْا
انہوں نے غور و فکر کیا
فِيْٓ اَنْفُسِهِمْ ۣ
اپنے نفسوں میں
مَا خَلَقَ اللّٰهُ
نہیں پیدا کیا اللہ نے
السَّمٰوٰتِ
آسمانوں کو
وَالْاَرْضَ
اور زمین کو
وَمَا بَيْنَهُمَآ
اور جو ان دونوں کے درمیان ہے
اِلَّا بالْحَقِّ
مگر حق کے ساتھ
وَاَجَلٍ مُّسَمًّى ۭ
اور ایک مقرر مدت تک کے لیے
وَاِنَّ
اور بیشک
كَثِيْرًا مِّنَ النَّاسِ
بہت سے لوگوں میں سے
بِلِقَاۗئِ
ساتھ ملاقات کے
رَبِّهِمْ
اپنے رب کی
لَكٰفِرُوْنَ
البتہ انکاری ہیں

کیا انہوں نے کبھی اپنے آپ میں غور و فکر نہیں کیا؟ اللہ نے زمین اور آسمانوں کو اور اُن ساری چیزوں کو جو اُن کے درمیان ہیں برحق اور ایک مقرّر مدت ہی کے لیے پیدا کیا ہے مگر بہت سے لوگ اپنے رب کی ملاقات کے منکر ہیں

تفسير

اَوَلَمْ يَسِيْرُوْا فِى الْاَرْضِ فَيَنْظُرُوْا كَيْفَ كَانَ عَاقِبَةُ الَّذِيْنَ مِنْ قَبْلِهِمْۗ كَانُوْۤا اَشَدَّ مِنْهُمْ قُوَّةً وَّاَثَارُوا الْاَرْضَ وَعَمَرُوْهَاۤ اَكْثَرَ مِمَّا عَمَرُوْهَا وَجَاۤءَتْهُمْ رُسُلُهُمْ بِالْبَيِّنٰتِ ۗ فَمَا كَانَ اللّٰهُ لِيَظْلِمَهُمْ وَلٰـكِنْ كَانُوْۤا اَنْفُسَهُمْ يَظْلِمُوْنَ ۗ

اَوَلَمْ يَسِيْرُوْا
کیا بھلا ہیں وہ چلے پھرے
فِي الْاَرْضِ
زمین میں
فَيَنْظُرُوْا
تو وہ دیکھتے
كَيْفَ كَانَ
کس طرح ہوا
عَاقِبَةُ الَّذِيْنَ
انجام ان لوگوں کا
مِنْ قَبْلِهِمْ ۭ
جو ان سے پہلے تھے
كَانُوْٓا
وہ تھے
اَشَدَّ مِنْهُمْ
زیادہ شدید۔ زیادہ طاقتور ان سے
قُوَّةً
قوت میں
وَّاَثَارُوا الْاَرْضَ
اور انہوں نے کھودا زمین کو
وَعَمَرُوْهَآ
اور آباد کیا اس کو
اَكْثَرَ
زیادہ
مِمَّا عَمَرُوْهَا
اس سے جو انہوں نے آباد کیا اس کو
وَجَاۗءَتْهُمْ
اور آئے ان کے پاس
رُسُلُهُمْ
ان کے رسول
بِالْبَيِّنٰتِ ۭ
ساتھ روشن دلائل کے
فَمَا كَانَ اللّٰهُ
تو نہ تھا اللہ
لِيَظْلِمَهُمْ
کہ ظلم کرتا ان پر
وَلٰكِنْ كَانُوْٓا
لیکن تھے وہ
اَنْفُسَهُمْ
اپنی جانوں پر
يَظْلِمُوْنَ
وہ ظلم کرتے

اور کیا یہ لوگ کبھی زمین میں چلے پھرے نہیں ہیں کہ اِنہیں اُن لوگوں کا انجام نظر آتا جو اِن سے پہلے گزر چکے ہیں؟ وہ اِن سے زیادہ طاقت رکھتے تھے، اُنہوں نے زمین کو خوب ادھیڑا تھا اور اُسے اتنا آباد کیا تھا جتنا اِنہوں نے نہیں کیا ہے اُن کے پاس ان کے رسول روشن نشانیاں لے کر آئے پھر اللہ ان پر ظلم کرنے والا نہ تھا، مگر وہ خود ہی اپنے اوپر ظلم کر رہے تھے

تفسير

ثُمَّ كَانَ عَاقِبَةَ الَّذِيْنَ اَسَاۤءُوا السُّوْۤاٰۤى اَنْ كَذَّبُوْا بِاٰيٰتِ اللّٰهِ وَكَانُوْا بِهَا يَسْتَهْزِءُوْنَ

ثُمَّ كَانَ
پھر ہوا
عَاقِبَةَ
انجام
الَّذِيْنَ
ان لوگوں کا
اَسَاۗءُوا
جنہوں نے برا کیا
السُّوْۗآٰى
بہت برا
اَنْ كَذَّبُوْا
کہ انہوں نے جھٹلایا
بِاٰيٰتِ اللّٰهِ
اللہ کی آیات کو
وَكَانُوْا
اور تھے وہ
بِهَا
ساتھ ان کے
يَسْتَهْزِءُوْنَ
مذاق اڑاتے

آ خرکار جن لوگوں نے بُرائیاں کی تھیں ان کا انجام بہت برا ہوا، اس لیے کہ انہوں نے اللہ کی آیات کو جھٹلایا تھا اور وہ ان کا مذاق اڑاتے تھے

تفسير
کے بارے میں معلومات :
الروم
القرآن الكريم:الروم
آية سجدہ (سجدة):-
سورۃ کا نام (latin):Ar-Rum
سورہ نمبر:30
کل آیات:60
کل کلمات:910
کل حروف:3534
کل رکوعات:6
مقام نزول:مکہ مکرمہ
ترتیب نزولی:84
آیت سے شروع:3409