Skip to main content
ARBNDEENIDTRUR
bismillah

الٓمّٓ ۗ

الۗمّۗ
ا، ل، م

الف ل م

تفسير

اَحَسِبَ النَّاسُ اَنْ يُّتْرَكُوْۤا اَنْ يَّقُوْلُوْۤا اٰمَنَّا وَهُمْ لَا يُفْتَـنُوْنَ

اَحَسِبَ النَّاسُ
کیا سمجھ لیا لوگوں نے
اَنْ يُّتْرَكُوْٓا
کہ وہ چھوڑ دیئے جائیں گے
اَنْ يَّقُوْلُوْٓا
اگر وہ کہہ دیں
اٰمَنَّا
ایمان لائے ہم
وَهُمْ
اور وہ
لَا يُفْتَنُوْنَ
آزمائے نہ جائیں گے

کیا لوگوں نے یہ سمجھ رکھا ہے کہ وہ بس اتنا کہنے پر چھوڑ دیے جائیں گے کہ "ہم ایمان لائے " اور ان کو آزمایا نہ جائے گا؟

تفسير

وَلَقَدْ فَتَـنَّا الَّذِيْنَ مِنْ قَبْلِهِمْ فَلَيَـعْلَمَنَّ اللّٰهُ الَّذِيْنَ صَدَقُوْا وَلَيَعْلَمَنَّ الْكٰذِبِيْنَ

وَلَقَدْ
اور البتہ
فَتَنَّا الَّذِيْنَ
آزمایا ہم نے لوگوں کو
مِنْ
سے
قَبْلِهِمْ
جو ان (سے) پہلے تھے
فَلَيَعْلَمَنَّ اللّٰهُ
پس البتہ ضرور جان لے گا اللہ
الَّذِيْنَ صَدَقُوْا
ان لوگوں کو جنہوں نے سچ کہا
وَلَيَعْلَمَنَّ
اور البتہ ضرور جان لے گا
الْكٰذِبِيْنَ
جھوٹوں کو

حالاں کہ ہم اُن سب لوگوں کی آزمائش کر چکے ہیں جو اِن سے پہلے گزرے ہیں اللہ کو تو ضرور یہ دیکھنا ہے کہ سچّے کون ہیں اور جھوٹے کون

تفسير

اَمْ حَسِبَ الَّذِيْنَ يَعْمَلُوْنَ السَّيِّاٰتِ اَنْ يَّسْبِقُوْنَا ۗ سَاۤءَ مَا يَحْكُمُوْنَ

اَمْ حَسِبَ الَّذِيْنَ
یا سمجھ رکھا ہے ان لوگوں نے
يَعْمَلُوْنَ السَّـيِّاٰتِ
جو عمل کرتے ہیں برے
اَنْ
کہ
يَّسْبِقُوْنَا ۭ
وہ آگے بڑھ جائیں گے ہم سے
سَاۗءَ
کتنا برا ہے
مَا يَحْكُمُوْنَ
جو وہ حکم لگا رہے ہیں

اور کیا وہ لوگ جو بُری حرکتیں کر رہے ہیں یہ سمجھے بیٹھے ہیں کہ وہ ہم سے بازی لے جائیں گے؟ بڑا غلط حکم ہے جو وہ لگا رہے ہیں

تفسير

مَنْ كَانَ يَرْجُوْا لِقَاۤءَ اللّٰهِ فَاِنَّ اَجَلَ اللّٰهِ لَاٰتٍۗ وَهُوَ السَّمِيْعُ الْعَلِيْمُ

مَنْ كَانَ
جو کوئی ہو
يَرْجُوْا
امید رکھتا
لِقَاۗءَ
ملاقات کی
اللّٰهِ
اللہ کی
فَاِنَّ
تو بیشک
اَجَلَ اللّٰهِ
اللہ کا مقرر کردہ وقت
لَاٰتٍ ۭ
البتہ آنے والا ہے
وَهُوَ السَّمِيْعُ الْعَلِيْمُ
اور وہ سننے والا ہے، جاننے والا ہے

جو کوئی اللہ سے ملنے کی توقع رکھتا ہو (اُسے معلوم ہونا چاہیے کہ) اللہ کا مقرر کیا ہوا وقت آنے ہی والا ہے، اور اللہ سب کچھ سُنتا اور جانتا ہے

تفسير

وَمَنْ جَاهَدَ فَاِنَّمَا يُجَاهِدُ لِنَفْسِهٖۗ اِنَّ اللّٰهَ لَـغَنِىٌّ عَنِ الْعٰلَمِيْنَ

وَمَنْ جَاهَدَ
اور جو کوئی مجاہدہ کرے گا/ جدوجہد کرے گا
فَاِنَّمَا
تو بیشک
يُجَاهِدُ
وہ جدوجہد کرے گا
لِنَفْسِهٖ ۭ
اپنے نفس کے لئے
اِنَّ اللّٰهَ
بیشک اللہ تعالیٰ
لَغَنِيٌّ
البتہ بےنیاز ہے
عَنِ الْعٰلَمِيْنَ
جہان والوں سے

جو شخص بھی مجاہدہ کریگا اپنے ہی بھلے کے لیے کرے گا، اللہ یقیناً دنیا جہان والوں سے بے نیاز ہے

تفسير

وَالَّذِيْنَ اٰمَنُوْا وَعَمِلُوا الصّٰلِحٰتِ لَـنُكَفِّرَنَّ عَنْهُمْ سَيِّاٰتِهِمْ وَلَـنَجْزِيَنَّهُمْ اَحْسَنَ الَّذِىْ كَانُوْا يَعْمَلُوْنَ

وَالَّذِيْنَ اٰمَنُوْا
اور وہ لوگ جو ایمان لائے
وَعَمِلُوا الصّٰلِحٰتِ
اور انہوں نے عمل کئے اچھے
لَنُكَفِّرَنَّ
البتہ ہم ضرور کردیں گے
عَنْهُمْ
ان سے
سَـيِّاٰتِهِمْ
ان کی برائیوں کو
وَلَنَجْزِيَنَّهُمْ
اور البتہ ہم ضرور جزا دیں گے ان کو
اَحْسَنَ
بہترین عمل کی
الَّذِيْ
وہ جو
كَانُوْا
تھے وہ
يَعْمَلُوْنَ
عمل کرتے

اور جو لوگ ایمان لائیں گے اور نیک اعمال کریں گے اُن کی برائیاں ہم ان سے دُور کر دیں گے اور انہیں اُن کے بہترین اعمال کی جزا دیں گے

تفسير

وَوَصَّيْنَا الْاِنْسَانَ بِوَالِدَيْهِ حُسْنًا ۗ وَاِنْ جَاهَدٰكَ لِتُشْرِكَ بِىْ مَا لَـيْسَ لَـكَ بِهٖ عِلْمٌ فَلَا تُطِعْهُمَا ۗ اِلَىَّ مَرْجِعُكُمْ فَاُنَبِّئُكُمْ بِمَا كُنْتُمْ تَعْمَلُوْنَ

وَوَصَّيْنَا الْاِنْسَانَ
اور وصیت کی ہم نے انسان کو/ تاکید کی ہم نے انسان کو
بِوَالِدَيْهِ
اپنے والدین کے ساتھ
حُسْـنًا ۭ
بھلائی کی
وَاِنْ
اور اگر
جَاهَدٰكَ
وہ دونوں زور ڈالیں تمجھ پر
لِتُشْرِكَ بِيْ
تاکہ تم شرک کرو میرے ساتھ
مَا لَيْسَ لَكَ
جس کا نہیں ہے تیرے لئے
بِهٖ عِلْمٌ
اس کا کوئی علم
فَلَا تُطِعْهُمَا ۭ
تو نہ تم اطاعت کرو ان کی
اِلَيَّ مَرْجِعُكُمْ
میری طرف لوٹنا ہے تم کو
فَاُنَبِّئُكُمْ بِمَا
تو میں بتاؤں گا تم کو ساتھ اس کے جو
كُنْتُمْ تَعْمَلُوْنَ
تھے تم عمل کیا کرتے

ہم نے انسان کو ہدایت کی ہے کہ اپنے والدین کے ساتھ نیک سلوک کرے لیکن اگر وہ تجھ پر زور ڈالیں کہ تو میرے ساتھ کسی ایسے (معبُود) کو شریک ٹھیرائے جسے تو (میرے شریک کی حیثیت سے) نہیں جانتا تو ان کی اطاعت نہ کر میری ہی طرف تم سب کو پلٹ کر آنا ہے، پھر میں تم کو بتا دوں گا کہ تم کیا کرتے رہے ہو

تفسير

وَالَّذِيْنَ اٰمَنُوْا وَعَمِلُوا الصّٰلِحٰتِ لَـنُدْخِلَـنَّهُمْ فِى الصّٰلِحِيْنَ

وَالَّذِيْنَ اٰمَنُوْا
اور وہ لوگ جو ایمان لائے
وَعَمِلُوا الصّٰلِحٰتِ
اور انہوں نے عمل کئے اچھے/ نیک
لَــنُدْخِلَنَّهُمْ
البتہ ہم ضرور داخل کریں گے ان کو
فِي الصّٰلِحِيْنَ
نیک لوگوں میں

اور جو لوگ ایمان لائے ہوں گے اور جنہوں نے نیک اعمال کیے ہوں گے اُن کو ہم ضرور صالحین میں داخل کریں گے

تفسير

وَمِنَ النَّاسِ مَنْ يَّقُوْلُ اٰمَنَّا بِاللّٰهِ فَاِذَاۤ اُوْذِىَ فِى اللّٰهِ جَعَلَ فِتْنَةَ النَّاسِ كَعَذَابِ اللّٰهِۗ وَلَٮِٕنْ جَاۤءَ نَـصْرٌ مِّنْ رَّبِّكَ لَيَـقُوْلُنَّ اِنَّا كُنَّا مَعَكُمْۗ اَوَلَـيْسَ اللّٰهُ بِاَعْلَمَ بِمَا فِىْ صُدُوْرِ الْعٰلَمِيْنَ

وَمِنَ النَّاسِ
اور لوگوں میں سے
مَنْ يَّقُوْلُ
کوئی ہے جو کہتا ہے
اٰمَنَّا باللّٰهِ
ہم ایمان لائے اللہ پر
فَاِذَآ اُوْذِيَ
پھر جب ستایا جاتا ہے
فِي اللّٰهِ
اللہ کی راہ میں
جَعَلَ فِتْنَةَ النَّاسِ
بنا لیتا ہے لوگوں کی آزمائش کو
كَعَذَابِ اللّٰهِ ۭ
مانند اللہ کے عذاب کے
وَلَىِٕنْ جَاۗءَ
اور البتہ اگر آگئی
نَصْرٌ مِّنْ رَّبِّكَ
فتح/ مدد تیرے رب کی طرف سے
لَيَقُوْلُنَّ
البتہ وہ ضرور کہیں گے
اِنَّا
بیشک ہم
كُنَّا
تھے ہم
مَعَكُمْ ۭ
تمہارے ساتھ
اَوَلَيْسَ اللّٰهُ
کیا بھلا نہیں اللہ
بِاَعْلَمَ
جوب جانتا
بِمَا فِيْ صُدُوْرِ
ساتھ اس کے جو سینوں میں ہے
الْعٰلَمِيْنَ
جہان والوں کے

لوگوں میں سے کوئی ایسا ہے جو کہتا ہے کہ ہم ایمان لائے اللہ پر مگر جب وہ اللہ کے معاملہ میں ستایا گیا تو اس نے لوگوں کی ڈالی ہوئی آزمائش کو اللہ کے عذاب کی طرح سمجھ لیا اب اگر تیرے رب کی طرف سے فتح و نصرت آ گئی تو یہی شخص کہے گا کہ "ہم تو تمہارے ساتھ تھے" کیا دنیا والوں کے دلوں کا حال اللہ کو بخوبی معلوم نہیں ہے؟

تفسير
کے بارے میں معلومات :
العنکبوت
القرآن الكريم:العنكبوت
آية سجدہ (سجدة):-
سورۃ کا نام (latin):Al-'Ankabut
سورہ نمبر:29
کل آیات:69
کل کلمات:980
کل حروف:4165
کل رکوعات:7
مقام نزول:مکہ مکرمہ
ترتیب نزولی:85
آیت سے شروع:3340