Skip to main content
ARBNDEENIDTRUR
bismillah

اَ لْحَمْدُ لِلّٰهِ فَاطِرِ السَّمٰوٰتِ وَالْاَرْضِ جَاعِلِ الْمَلٰۤٮِٕكَةِ رُسُلًا اُولِىْۤ اَجْنِحَةٍ مَّثْنٰى وَثُلٰثَ وَرُبٰعَ ۗ يَزِيْدُ فِى الْخَـلْقِ مَا يَشَاۤءُ ۗ اِنَّ اللّٰهَ عَلٰى كُلِّ شَىْءٍ قَدِيْرٌ

اَلْحَمْدُ لِلّٰهِ
سب تعریف اللہ کے لیے ہے
فَاطِرِ السَّمٰوٰتِ
پیدا کرنے والا ہے آسمانوں کا
وَالْاَرْضِ
اور زمین کا
جَاعِلِ الْمَلٰۗىِٕكَةِ
بنانے والا ہے فرشتوں کو
رُسُلًا
پیغام بر
اُولِيْٓ اَجْنِحَةٍ
پروں والے
مَّثْنٰى
دو ، دو
وَثُلٰثَ
اور تین، تین
وَرُبٰعَ
اور چار، چار
يَزِيْدُ
اضافہ کرتا ہے
فِي الْخَلْقِ
پیدائش میں
مَا يَشَاۗءُ
جو وہ چاہتا ہے
اِنَّ اللّٰهَ
بیشک اللہ تعالیٰ
عَلٰي كُلِّ شَيْءٍ قَدِيْرٌ
ہر چیز قادر ہے

تعریف اللہ ہی کے لیے ہے جو آسمانوں اور زمین کا بنانے والا اور فرشتوں کو پیغام رساں مقرر کر نے والا ہے، (ایسے فرشتے) جن کے دو دو اور تین تین اور چار چار بازو ہیں وہ اپنی مخلوق کی ساخت میں جیسا چاہتا ہے اضافہ کرتا ہے یقیناً اللہ ہر چیز پر قادر ہے

تفسير

مَا يَفْتَحِ اللّٰهُ لِلنَّاسِ مِنْ رَّحْمَةٍ فَلَا مُمْسِكَ لَهَا  ۚ وَمَا يُمْسِكْ ۙ فَلَا مُرْسِلَ لَهٗ مِنْۢ بَعْدِه  ۗ وَهُوَ الْعَزِيْزُ الْحَكِيْمُ

مَا يَفْتَحِ اللّٰهُ
جو کھولتا ہے اللہ
لِلنَّاسِ
لوگوں کے لیے
مِنْ رَّحْمَةٍ
کوئی رحمت
فَلَا مُمْسِكَ لَهَا
تو نہیں روکنے والا اس کو کوئی
وَمَا يُمْسِكْ
اور جو وہ روکتا ہے
فَلَا مُرْسِلَ لَهٗ
تو نہیں کوئی بھیجنے والا اس کو
مِنْۢ بَعْدِهٖ
اس کے بعد
وَهُوَ الْعَزِيْزُ الْحَكِيْمُ
اور وہ زبردست ہے، حکمت والا ہے

اللہ جس رحمت کا دروازہ بھی لوگوں کے لیے کھول دے اسے کوئی روکنے والا نہیں اور جسے وہ بند کر دے اسے اللہ کے بعد پھر کوئی دوسرا کھولنے والا نہیں وہ زبردست اور حکیم ہے

تفسير

يٰۤاَيُّهَا النَّاسُ اذْكُرُوْا نِعْمَتَ اللّٰهِ عَلَيْكُمْۗ هَلْ مِنْ خَالِـقٍ غَيْرُ اللّٰهِ يَرْزُقُكُمْ مِّنَ السَّمَاۤءِ وَالْاَرْضِۗ لَاۤ اِلٰهَ اِلَّا هُوَ ۖ فَاَنّٰى تُؤْفَكُوْنَ

يٰٓاَيُّهَا النَّاسُ اذْكُرُوْا
اے لوگو ! یا دو کرو
نِعْمَتَ اللّٰهِ
اللہ کی نعمت کو
عَلَيْكُمْ
جو تم پر ہے
هَلْ مِنْ
کیا کوئی
خَالِقٍ
پیدا کرنے والا ہے
غَيْرُ اللّٰهِ
اللہ کے علاوہ
يَرْزُقُكُمْ
جو رزق دیتا ہو تم کو
مِّنَ السَّمَاۗءِ وَالْاَرْضِ
آسمان سے اور زمین سے
لَآ اِلٰهَ
نہیں کوئی الہ برحق
اِلَّا هُوَ
مگر وہی
فَاَنّٰى تُـؤْفَكُوْنَ
تو کہاں سے تم پھیرے جاتے ہو

لوگو، تم پر اللہ کے جو احسانات ہیں انہیں یاد رکھو کیا اللہ کے سوا کوئی اور خالق بھی ہے جو تمہیں آسمان اور زمین سے رزق دیتا ہو؟ کوئی معبود اُس کے سوا نہیں، آخر تم کہاں سے دھوکا کھا رہے ہو؟

تفسير

وَاِنْ يُّكَذِّبُوْكَ فَقَدْ كُذِّبَتْ رُسُلٌ مِّنْ قَبْلِكَۗ وَاِلَى اللّٰهِ تُرْجَعُ الْاُمُوْرُ

وَاِنْ يُّكَذِّبُوْكَ
اور اگر وہ جھٹلاتے ہیں آپ کو
فَقَدْ
تو تحقیق
كُذِّبَتْ
جھٹلائے گئے
رُسُلٌ مِّنْ قَبْلِكَ
کئی رسول تجھ سے پہلے
وَ اِلَى اللّٰهِ
اور اللہ کی طرف
تُرْجَعُ الْاُمُوْرُ
لوٹائے جاتے ہیں سب معاملات

اب اگر (اے نبیؐ) یہ لوگ تمہیں جھٹلاتے ہیں (تو یہ کوئی نئی بات نہیں)، تم سے پہلے بھی بہت سے رسول جھٹلائے جا چکے ہیں، اور سارے معاملات آخرکار اللہ ہی کی طرف رجوع ہونے والے ہیں

تفسير

يٰۤـاَيُّهَا النَّاسُ اِنَّ وَعْدَ اللّٰهِ حَقٌّ فَلَا تَغُرَّنَّكُمُ الْحَيٰوةُ الدُّنْيَا ۗ وَلَا يَغُرَّنَّكُمْ بِاللّٰهِ الْغَرُوْرُ

يٰٓاَيُّهَا النَّاسُ
اے لوگو
اِنَّ وَعْدَ اللّٰهِ
بیشک وعدہ اللہ کا
حَقٌّ
سچا ہے
فَلَا تَغُرَّنَّكُمُ
تو نہ دھوکے میں ڈالے تم کو
الْحَيٰوةُ
زندگی
الدُّنْيَا
دنیا کی
وَلَا يَغُرَّنَّكُمْ
ور نہ دھوکے میں ڈالے تم کو
بِاللّٰهِ
اللہ کے معاملے میں
الْغَرُوْرُ
دھوکے باز (شیطان)

لوگو، اللہ کا وعدہ یقیناً برحق ہے، لہٰذا دنیا کی زندگی تمہیں دھوکے میں نہ ڈالے اور نہ وہ بڑا دھوکے باز تمہیں اللہ کے بارے میں دھوکہ دینے پائے

تفسير

اِنَّ الشَّيْطٰنَ لَـكُمْ عَدُوٌّ فَاتَّخِذُوْهُ عَدُوًّا ۗ اِنَّمَا يَدْعُوْا حِزْبَهٗ لِيَكُوْنُوْا مِنْ اَصْحٰبِ السَّعِيْرِۗ

اِنَّ الشَّيْطٰنَ
کیونکہ شیطان
لَكُمْ
تمہارے لیے
عَدُوٌّ
دشمن ہے
فَاتَّخِذُوْهُ عَدُوًّا
تو بناؤ اس کو دشمن
اِنَّمَا
بیشک
يَدْعُوْ
وہ بلاتا ہے۔ بلا رہا ہے
احِزْبَهٗ
اپنے جتھے کو
لِيَكُوْنُوْا
تاکہ وہ ہوجائیں
مِنْ اَصْحٰبِ السَّعِيْرِ
بھڑکتی ہوئی آگ کے ساتھیوں میں سے

در حقیقت شیطان تمہارا دشمن ہے اس لیے تم بھی اسے اپنا دشمن ہی سمجھو وہ تو اپنے پیروؤں کو اپنی راہ پر اس لیے بلا رہا ہے کہ وہ دوزخیوں میں شامل ہو جائیں

تفسير

اَ لَّذِيْنَ كَفَرُوْا لَهُمْ عَذَابٌ شَدِيْدٌ ۗ وَّالَّذِيْنَ اٰمَنُوا وَعَمِلُوْا الصّٰلِحٰتِ لَهُمْ مَّغْفِرَةٌ وَّاَجْرٌ كَبِيْرٌ

اَلَّذِيْنَ كَفَرُوْا
وہ لوگ جنہوں نے کفر کیا
لَهُمْ
ان کے لیے
عَذَابٌ
عذاب ہے
شَدِيْدٌ
سخت
وَالَّذِيْنَ اٰمَنُوْا
اور وہ لوگ جو ایمان لائے
وَعَمِلُوا الصّٰلِحٰتِ
اور انہوں نے عمل کیے اچھے
لَهُمْ مَّغْفِرَةٌ
ان کے لیے بخشش ہے
وَّاَجْرٌ كَبِيْرٌ
اجر ہے بہت بڑا

جو لوگ کفر کریں گے اُن کے لیے سخت عذاب ہے اور جو ایمان لائیں گے اور نیک عمل کریں گے اُن کے لیے مغفرت اور بڑا اجر ہے

تفسير

اَفَمَنْ زُيِّنَ لَهٗ سُوْۤءُ عَمَلِهٖ فَرَاٰهُ حَسَنًا ۗ فَاِنَّ اللّٰهَ يُضِلُّ مَنْ يَّشَاۤءُ وَيَهْدِىْ مَنْ يَّشَاۤءُ ۖ فَلَا تَذْهَبْ نَـفْسُكَ عَلَيْهِمْ حَسَرٰتٍ ۗ اِنَّ اللّٰهَ عَلِيْمٌۢ بِمَا يَصْنَـعُوْنَ

اَفَمَنْ
کیا بھلا جو
زُيِّنَ
خوبصورت بنادیا گیا
لَهٗ سُوْۗءُ عَمَلِهٖ
اس کے لیے اس کا برا عمل
فَرَاٰهُ حَسَـنًا
تو وہ سمجھتا ہے اس کو۔ دیکھتا ہے اس کو اچھا
ۭ فَاِنَّ اللّٰهَ
تو بیشک اللہ تعالیٰ
يُضِلُّ مَنْ يَّشَاۗءُ
گمراہ کرتا ہے جس کو چاہتا ہے
وَيَهْدِيْ مَنْ يَّشَاۗءُ
اور ہدایت دیتا ہے جس کو چاہتا ہے
فَلَا تَذْهَبْ
پس نہ جائے
نَفْسُكَ عَلَيْهِمْ
تیرا نفس ان پر
حَسَرٰتٍ
حسرتیں کرتا ہوا
اِنَّ اللّٰهَ عَلِـيْمٌۢ
بیشک اللہ تعالیٰ جاننے والا ہے
بِمَا يَصْنَعُوْنَ
جو کچھ وہ کررہے ہیں

(بھلا کچھ ٹھکانا ہے اُس شخص کی گمراہی کا) جس کے لیے اُس کا برا عمل خوشنما بنا دیا گیا ہو اور وہ اُسے اچھا سمجھ رہا ہو؟ حقیقت یہ ہے کہ اللہ جسے چاہتا ہے گمراہی میں ڈال دیتا ہے اور جسے چاہتا ہے راہ راست دکھا دیتا ہے پس (اے نبیؐ) خواہ مخواہ تمہاری جان ان لوگوں کی خاطر غم و افسوس میں نہ گھلے جو کچھ یہ کر رہے ہیں اللہ اُس کو خوب جانتا ہے

تفسير

وَاللّٰهُ الَّذِىْۤ اَرْسَلَ الرِّيٰحَ فَتُثِيْرُ سَحَابًا فَسُقْنٰهُ اِلٰى بَلَدٍ مَّيِّتٍ فَاَحْيَيْنَا بِهِ الْاَرْضَ بَعْدَ مَوْتِهَا ۗ كَذٰلِكَ النُّشُوْرُ

اَرْسَلَ الرِّيٰحَ
تو وہ اٹھاتی ہیں
فَتُـثِيْرُ
بادل
سَحَابًا
پھرجاتے ہیں ہم اس کو۔ چلاتے ہیں ہم اس کو
فَسُقْنٰهُ
مردہ زمین کی طرف۔ علاقے کی طرف
اِلٰى بَلَدٍ مَّيِّتٍ
پھر زندہ کرتے ہیں ہم
فَاَحْيَيْنَا
اس کے ساتھ زمین کو
بِهِ الْاَرْضَ
اس کے مرنے کے بعد
بَعْدَ مَوْتِهَا
اسی طرح ہوگا دوبارہ اٹھنا
ۭ كَذٰلِكَ النُّشُوْرُ
اسی طرح ہوگا دوبارہ اٹھنا

وہ اللہ ہی تو ہے جو ہواؤں کو بھیجتا ہے، پھر وہ بادل اٹھاتی ہیں، پھر ہم اسے ایک اُجاڑ علاقے کی طرف لے جاتے ہیں اور اسی زمین کو جِلا اٹھاتے ہیں جو مری پڑی تھی مرے ہوئے انسانوں کا جی اٹھنا بھی اسی طرح ہوگا

تفسير

مَنْ كَانَ يُرِيْدُ الْعِزَّةَ فَلِلّٰهِ الْعِزَّةُ جَمِيْعًا ۗ اِلَيْهِ يَصْعَدُ الْـكَلِمُ الطَّيِّبُ وَالْعَمَلُ الصَّالِحُ يَرْفَعُهٗ ۗ وَ الَّذِيْنَ يَمْكُرُوْنَ السَّيِّاٰتِ لَهُمْ عَذَابٌ شَدِيْدٌ ۗ وَمَكْرُ اُولٰۤٮِٕكَ هُوَ يَبُوْرُ

مَنْ كَانَ
جو کوئی ہے
يُرِيْدُ
چاہتا
الْعِزَّةَ
عزت
فَلِلّٰهِ الْعِزَّةُ
تو اللہ کے لیے عزت ہے
جَمِيْعًا
ساری کی ساری
ۭاِلَيْهِ
اسی کی طرف
يَصْعَدُ الْكَلِمُ
چڑھتے ہیں کلمات
الطَّيِّبُ
پاکیزہ
وَالْعَمَلُ الصَّالِحُ
اور نیک عمل
يَرْفَعُهٗ ۭ
اوپر چڑھاتا ہے اس کو
وَالَّذِيْنَ
اور وہ لوگ
يَمْكُرُوْنَ
جو چالبازیاں کرتے ہیں
السَّـيِّاٰتِ
بری۔ بےہودہ
لَهُمْ عَذَابٌ شَدِيْدٌ
ان کے لیے سخت عذاب ہے
وَمَكْرُ اُولٰۗىِٕكَ
اور مکر ان لوگوں کا
هُوَ
وہ
يَبُوْرُ
غارت ہونے والا ہے۔ تباہ ہوجائے گا

جو کوئی عزت چاہتا ہو اُسے معلوم ہونا چاہیے کہ عزت ساری کی ساری اللہ کی ہے اُس کے ہاں جو چیز اوپر چڑھتی ہے وہ صرف پاکیزہ قول ہے، اور عمل صالح اس کو اوپر چڑھاتا ہے رہے وہ لوگ جو بیہودہ چال بازیاں کرتے ہیں، اُن کے لیے سخت عذاب ہے اور اُن کا مکر خود ہی غارت ہونے والا ہے

تفسير
کے بارے میں معلومات :
فاطر
القرآن الكريم:فاطر
آية سجدہ (سجدة):-
سورۃ کا نام (latin):Fatir
سورہ نمبر:35
کل آیات:45
کل کلمات:970
کل حروف:3130
کل رکوعات:5
مقام نزول:مکہ مکرمہ
ترتیب نزولی:43
آیت سے شروع:3660