Skip to main content
ARBNDEENIDTRUR
bismillah

اَلْحَـاۤقَّةُ ۙ

اَلْحَاۗقَّةُ
حق ہونے والی۔ ثابت ہونے والی

ہونی شدنی!

تفسير

مَا الْحَـاۤقَّةُ ۚ

مَا الْحَاۗقَّةُ
کیا ہے وہ ثابت ہوکررہنے والی

کیا ہے وہ ہونی شدنی؟

تفسير

وَمَاۤ اَدْرٰٮكَ مَا الْحَــاۤقَّةُ ۗ

وَمَآ اَدْرٰىكَ
اور کیا چیز بتائے تجھ کو
مَا الْحَاۗقَّةُ
کیا ہے وہ ثابت ہوکررہنے والی

اور تم کیا جانو کہ وہ کیا ہے ہونی شدنی؟

تفسير

كَذَّبَتْ ثَمُوْدُ وَعَادٌۢ بِالْقَارِعَةِ

كَذَّبَتْ
جھٹلایا
ثَمُوْدُ
ثمود نے
وَعَادٌۢ
اور عاد نے
بِالْقَارِعَةِ
کھڑکا دینے والی کو

ثمود اور عاد نے اُس اچانک ٹوٹ پڑنے والی آفت کو جھٹلایا

تفسير

فَاَمَّا ثَمُوْدُ فَاُهْلِكُوْا بِالطَّاغِيَةِ

فَاَمَّا
تو رہے
ثَمُوْدُ
ثمود
فَاُهْلِكُوْا
پس وہ ہلاک کہے گئے
بِالطَّاغِيَةِ
اونچی آواز سے

تو ثمود ایک سخت حادثہ میں ہلاک کیے گئے

تفسير

وَاَمَّا عَادٌ فَاُهْلِكُوْا بِرِيْحٍ صَرْصَرٍ عَاتِيَةٍۙ

فَاُهْلِكُوْا
ساتھ ایک ہوا کے
بِرِيْحٍ
پالے والی۔ تند
صَرْصَرٍ
سرکش ۔ حد سے نکلنے والی
عَاتِيَةٍ
سرکش ۔ حد سے نکلنے والی

اور عاد ایک بڑی شدید طوفانی آندھی سے تباہ کر دیے گئے

تفسير

سَخَّرَهَا عَلَيْهِمْ سَبْعَ لَيَالٍ وَّثَمٰنِيَةَ اَيَّامٍۙ حُسُوْمًا ۙ فَتَرَى الْقَوْمَ فِيْهَا صَرْعٰىۙ كَاَنَّهُمْ اَعْجَازُ نَخْلٍ خَاوِيَةٍ ۚ

سَخَّرَهَا
مسلط کردیا اس کو
عَلَيْهِمْ
ان پر
سَبْعَ لَيَالٍ
ساتھ راتوں تک
وَّثَمٰنِيَةَ
اور آٹھ
اَيَّامٍ
دن
حُسُوْمًا
پے درپے۔ مسلسل
فَتَرَى الْقَوْمَ
تو تم دیکھتے لوگوں کو۔ قوم کو
فِيْهَا صَرْعٰى
اس میں گرے ہوئے ہیں
كَاَنَّهُمْ
گویا کہ وہ
اَعْجَازُ
تنے ہیں
نَخْلٍ
کھجور کے درخت کے
خَاوِيَةٍ
خالی۔ کھوکھلے

اللہ تعالیٰ نے اُس کو مسلسل سات رات اور آٹھ دن اُن پر مسلط رکھا (تم وہاں ہوتے تو) دیکھتے کہ وہ وہاں اِس طرح پچھڑے پڑے ہیں جیسے وہ کھجور کے بوسیدہ تنے ہوں

تفسير

فَهَلْ تَرٰى لَهُمْ مِّنْۢ بَاقِيَةٍ

لَهُمْ
کوئی
مِّنْۢ
باقی بچا ہوا
بَاقِيَةٍ
باقی بچا ہوا

اب کیا اُن میں سے کوئی تمہیں باقی بچا نظر آتا ہے؟

تفسير

وَجَاۤءَ فِرْعَوْنُ وَمَنْ قَبْلَهٗ وَالْمُؤْتَفِكٰتُ بِالْخَـاطِئَةِۚ

وَجَاۗءَ فِرْعَوْنُ
اور آیا فرعون
وَمَنْ قَبْلَهٗ
اور جو اس سے پہلے تھے
وَالْمُؤْتَفِكٰتُ
اور اٹھائی جانے والی بستیاں
بِالْخَاطِئَةِ
ساتھ خطا کے

اور اِسی خطائے عظیم کا ارتکاب فرعون اور اُس سے پہلے کے لوگوں نے اور تل پٹ ہو جانے والی بستیوں نے کیا

تفسير

فَعَصَوْا رَسُوْلَ رَبِّهِمْ فَاَخَذَهُمْ اَخْذَةً رَّابِيَةً

فَعَصَوْا
تو انہوں نے نافرمانی کی
رَسُوْلَ رَبِّهِمْ
اپنے رب کے رسول کی
فَاَخَذَهُمْ
تو اس نے پکڑ لیا ان کو
اَخْذَةً
ایک پکڑ
رَّابِيَةً
سخت سے

ان سب نے اپنے رب کے رسول کی بات نہ مانی تو اُس نے اُن کو بڑی سختی کے ساتھ پکڑا

تفسير
کے بارے میں معلومات :
الحاقہ
القرآن الكريم:الحاقة
آية سجدہ (سجدة):-
سورۃ کا نام (latin):Al-Haqqah
سورہ نمبر:69
کل آیات:52
کل کلمات:256
کل حروف:1034
کل رکوعات:2
مقام نزول:مکہ مکرمہ
ترتیب نزولی:78
آیت سے شروع:5323