Skip to main content
bismillah
حمٓ
حم

ح م

تفسير
عٓسٓقٓ
عسق

ع س ق

تفسير
كَذَٰلِكَ
اسی طرح
يُوحِىٓ
وحی کرتا رہا ہے
إِلَيْكَ
آپ کی طرف
وَإِلَى
اور طرف
ٱلَّذِينَ
ان لوگوں کے
مِن
آپ سے
قَبْلِكَ
قبل
ٱللَّهُ
اللہ تعالیٰ
ٱلْعَزِيزُ
غالب،
ٱلْحَكِيمُ
حکمت والا

اِسی طرح اللہ غالب و حکیم تمہاری طرف اور تم سے پہلے گزرے ہوئے (رسولوں) کی طرف وحی کرتا رہا ہے

تفسير
لَهُۥ
اس کے لیے ہی ہے
مَا
جو کچھ
فِى
میں ہے
ٱلسَّمَٰوَٰتِ
آسمانوں
وَمَا
اور جو کچھ
فِى
میں ہے
ٱلْأَرْضِۖ
زمین
وَهُوَ
اور وہ
ٱلْعَلِىُّ
بلند ہے
ٱلْعَظِيمُ
بہت بڑا ہے

آسمانوں اور زمین میں جو کچھ بھی ہے اُسی کا ہے، وہ برتر اور عظیم ہے

تفسير
تَكَادُ
قریب ہے
ٱلسَّمَٰوَٰتُ
آسمان
يَتَفَطَّرْنَ
کہ پھٹ پڑیں
مِن
سے
فَوْقِهِنَّۚ
اپنے اوپر (سے)
وَٱلْمَلَٰٓئِكَةُ
اور فرشتے
يُسَبِّحُونَ
وہ تسبیح کررہے ہیں
بِحَمْدِ
ساتھ حمد کے
رَبِّهِمْ
اپنے رب کی
وَيَسْتَغْفِرُونَ
اور وہ بخشش مانگتے ہیں
لِمَن
واسطے ان کے جو
فِى
میں ہیں
ٱلْأَرْضِۗ
زمین
أَلَآ
خبردار
إِنَّ
بیشک
ٱللَّهَ
اللہ تعالیٰ
هُوَ
وہ
ٱلْغَفُورُ
غفور
ٱلرَّحِيمُ
رحیم ہے

قریب ہے کہ آسمان اوپر سے پھٹ پڑیں فرشتے اپنے رب کی حمد کے ساتھ اُس کی تسبیح کر رہے ہیں اور زمین والوں کے حق میں درگزر کی درخواستیں کیے جاتے ہیں آگاہ رہو، حقیقت میں اللہ غفور و رحیم ہی ہے

تفسير
وَٱلَّذِينَ
اور وہ لوگ جنہوں نے
ٱتَّخَذُوا۟
بنالیے
مِن
دُونِهِۦٓ
اس کے سوا
أَوْلِيَآءَ
کچھ دوست۔ سرپرست
ٱللَّهُ
اللہ تعالیٰ
حَفِيظٌ
نگہبان
عَلَيْهِمْ
ان پر
وَمَآ
اور نہیں
أَنتَ
آپ
عَلَيْهِم
ان پر
بِوَكِيلٍ
حوالہ دار

جن لوگوں نے اُس کو چھوڑ کر اپنے کچھ دوسرے سرپرست بنا رکھے ہیں، اللہ ہی اُن پر نگراں ہے، تم ان کے حوالہ دار نہیں ہو

تفسير
وَكَذَٰلِكَ
اور اسی طرح
أَوْحَيْنَآ
وحی کی ہم نے
إِلَيْكَ
آپ کی طرف
قُرْءَانًا
قرآن
عَرَبِيًّا
عربی کی
لِّتُنذِرَ
تاکہ تم خبردار کرو
أُمَّ
مکہ والوں کو
ٱلْقُرَىٰ
مکہ والوں کو
وَمَنْ
اور جو اس کے
حَوْلَهَا
آس پاس ہیں
وَتُنذِرَ
اور تم خبردار کرو
يَوْمَ
دن سے
ٱلْجَمْعِ
جمع ہونے کے
لَا
نہیں
رَيْبَ
کوئی شک
فِيهِۚ
اس میں
فَرِيقٌ
ایک گروہ ہوگا
فِى
میں
ٱلْجَنَّةِ
جنت
وَفَرِيقٌ
اور ایک گروہ ہوگا
فِى
میں
ٱلسَّعِيرِ
دوزخ

ہاں، اِسی طرح اے نبیؐ، یہ قرآن عربی ہم نے تمہاری طرف وحی کیا ہے تاکہ تم بستیوں کے مرکز (شہر مکہ) اور اُس کے گرد و پیش رہنے والوں کو خبردار کر دو، اور جمع ہونے کے دن سے ڈرا دو جن کے آنے میں کوئی شک نہیں ایک گروہ کو جنت میں جانا ہے اور دوسرے گروہ کو دوزخ میں

تفسير
وَلَوْ
اور اگر
شَآءَ
چاہتا
ٱللَّهُ
اللہ
لَجَعَلَهُمْ
البتہ بنادیتا ان کو
أُمَّةً
امت
وَٰحِدَةً
ایک ہی
وَلَٰكِن
لیکن
يُدْخِلُ
وہ داخل کرے گا۔ وہ داخل کرتا ہے
مَن
جس کو
يَشَآءُ
چاہے گا۔ چاہتا ہے
فِى
میں
رَحْمَتِهِۦۚ
اپنی رحمت
وَٱلظَّٰلِمُونَ
اور ظالم
مَا
نہیں
لَهُم
ان کے لیے
مِّن
کوئی
وَلِىٍّ
دوست
وَلَا
او ر نہ
نَصِيرٍ
کوئی مددگار

اگر اللہ چاہتا تو اِن سب کو ایک ہی امت بنا دیتا، مگر وہ جسے چاہتا ہے اپنی رحمت میں داخل کرتا ہے، اور ظالموں کا نہ کوئی ولی ہے نہ مدد گار

تفسير
أَمِ
یا
ٱتَّخَذُوا۟
انہوں نے بنا رکھا ہے
مِن
دُونِهِۦٓ
اس کے سوا
أَوْلِيَآءَۖ
کچھ سرپرست
فَٱللَّهُ
پس اللہ تعالیٰ
هُوَ
وہی
ٱلْوَلِىُّ
سرپرست ہے
وَهُوَ
اور وہ
يُحْىِ
زندہ کرے گا
ٱلْمَوْتَىٰ
مردوں کو
وَهُوَ
اور وہ
عَلَىٰ
پر
كُلِّ
ہر
شَىْءٍ
چیز
قَدِيرٌ
قدرت والا ہے

کیا یہ (ایسے نادان ہیں کہ) اِنہوں نے اُسے چھوڑ کر دوسرے ولی بنا رکھے ہیں؟ ولی تو اللہ ہی ہے، وہی مُردوں کو زندہ کرتا ہے، اور وہ ہر چیز پر قادر ہے

تفسير
وَمَا
اور جو بھی
ٱخْتَلَفْتُمْ
اختلاف کیا تم نے
فِيهِ
اس میں
مِن
میں سے
شَىْءٍ
کسی چیز
فَحُكْمُهُۥٓ
تو اس کا فیصلہ کرنا
إِلَى
طرف
ٱللَّهِۚ
اللہ کے ہے
ذَٰلِكُمُ
یہ ہے
ٱللَّهُ
اللہ
رَبِّى
رب میرا
عَلَيْهِ
اسی پر
تَوَكَّلْتُ
میں نے بھروسہ کیا
وَإِلَيْهِ
اور اسی کی طرف
أُنِيبُ
میں رجوع کرتا ہوں

تمہارے درمیان جس معاملہ میں بھی اختلاف ہو، اُس کا فیصلہ کرنا اللہ کا کام ہے وہی اللہ میرا رب ہے، اُسی پر میں نے بھروسہ کیا، اور اُسی کی طرف میں رجوع کرتا ہوں

تفسير
کے بارے میں معلومات :
الشوریٰ
القرآن الكريم:الشورى
آية سجدہ (سجدة):-
سورۃ کا نام (latin):Asy-Syura
سورہ نمبر:42
کل آیات:53
کل کلمات:860
کل حروف:3588
کل رکوعات:5
مقام نزول:مکہ مکرمہ
ترتیب نزولی:62
آیت سے شروع:4272