Skip to main content
ARBNDEENIDTRUR

بَرَاۤءَةٌ مِّنَ اللّٰهِ وَرَسُوْلِهٖۤ اِلَى الَّذِيْنَ عَاهَدْتُّمْ مِّنَ الْمُشْرِكِيْنَ ۗ

مِّنَ اللّٰهِ
اور اس کے رسول کی طرف سے
وَرَسُوْلِهٖٓ
ان لوگوں کی طرف
اِلَى الَّذِيْنَ
معاہدے کیے تم نے
عٰهَدْتُّمْ
مشرکین میں سے
مِّنَ الْمُشْرِكِيْنَ
مشرکین میں سے

اعلان برات ہے اللہ اور اس کے رسول کی طرف سے اُن مشرکین کو جن سے تم نے معاہدے کیے تھے

تفسير

فَسِيْحُوْا فِى الْاَرْضِ اَرْبَعَةَ اَشْهُرٍ وَّاعْلَمُوْۤا اَنَّكُمْ غَيْرُ مُعْجِزِى اللّٰهِۙ وَاَنَّ اللّٰهَ مُخْزِى الْكٰفِرِيْنَ

فَسِيْحُوْا
پس چلو پھرو۔ سیر کرو
فِي الْاَرْضِ
زمین میں
اَرْبَعَةَ
چار
اَشْهُرٍ
مہینے
وَّاعْلَمُوْٓا
اور جان لو
اَنَّكُمْ
بیشک تم
غَيْرُ مُعْجِزِي اللّٰهِ
نہیں عاجز کرنے والے اللہ کو
ۙ وَاَنَّ
اور بیشک
اللّٰهَ مُخْزِي
اللہ تعالیٰ رسوا کرنے والا ہے
الْكٰفِرِيْنَ
کافروں کو

پس تم لوگ ملک میں چار مہینے اور چل پھر لو اور جان رکھو کہ تم اللہ کو عاجز کرنے والے نہیں ہو، اور یہ کہ اللہ منکرین حق کو رسوا کرنے والا ہے

تفسير

وَاَذَانٌ مِّنَ اللّٰهِ وَرَسُوْلِهٖۤ اِلَى النَّاسِ يَوْمَ الْحَجِّ الْاَكْبَرِ اَنَّ اللّٰهَ بَرِىْۤءٌ مِّنَ الْمُشْرِكِيْنَ ۙ وَ رَسُوْلُهٗ ۗ فَاِنْ تُبْتُمْ فَهُوَ خَيْرٌ لَّـكُمْ ۚ وَاِنْ تَوَلَّيْتُمْ فَاعْلَمُوْۤا اَنَّكُمْ غَيْرُ مُعْجِزِى اللّٰهِ ۗ وَبَشِّرِ الَّذِيْنَ كَفَرُوْا بِعَذَابٍ اَ لِيْمٍۙ

مِّنَ اللّٰهِ
اور اس کے رسول کی طرف سے
وَرَسُوْلِهٖٓ
لوگوں کی طرف
اِلَى النَّاسِ
حج اکبر کے دن
يَوْمَ الْحَجِّ الْاَكْبَرِ
بیشک
اَنَّ
اللہ
اللّٰهَ
بری الذمہ ہے
بَرِيْۗءٌ
مشرکوں سے
مِّنَ الْمُشْرِكِيْنَ
اور اس کا رسول بھی
ڏ وَرَسُوْلُهٗ
پھر اگر
ۭ فَاِنْ
تو بہ کرلو تم
تُبْتُمْ
تو وہ
فَهُوَ
بہتر ہے تمہارے لیے
خَيْرٌ لَّكُمْ ۚ
اور اگر
وَاِنْ
منہ پھیرا تم نے
تَوَلَّيْتُمْ
تو جان لو
فَاعْلَمُوْٓا
بیشک تم
اَنَّكُمْ
نہیں
غَيْرُ
عاجز کرنے والے اللہ کو
مُعْجِزِي اللّٰهِ
اور خوش خبری دے دو
ۭ وَبَشِّرِ
ان لوگوں کو
الَّذِيْنَ
جنہوں نے کفر کیا
كَفَرُوْا
عذاب کی
بِعَذَابٍ
دردناک
اَلِــيْمٍ
دردناک

اطلاع عام ہے اللہ اور اس کے رسول کی طرف سے حج اکبر کے دن تمام لوگوں کے لیے کہ اللہ مشرکین سے بری الذمہ ہے اور اُس کا رسول بھی اب اگر تم لوگ توبہ کر لو تو تمہارے ہی لیے بہتر ہے اور جو منہ پھیرتے ہو تو خوب سمجھ لو کہ تم اللہ کو عاجز کرنے والے نہیں ہو اور اے نبیؐ، انکار کرنے والوں کو سخت عذاب کی خوشخبری سنا دو

تفسير

اِلَّا الَّذِيْنَ عَاهَدْتُّمْ مِّنَ الْمُشْرِكِيْنَ ثُمَّ لَمْ يَنْقُصُوْكُمْ شَيْـًٔـا وَّلَمْ يُظَاهِرُوْا عَلَيْكُمْ اَحَدًا فَاَتِمُّوْۤا اِلَيْهِمْ عَهْدَهُمْ اِلٰى مُدَّتِهِمْ ۗ اِنَّ اللّٰهَ يُحِبُّ الْمُتَّقِيْنَ

اِلَّا
سوائے
الَّذِيْنَ
ان لوگوں کو
عٰهَدْتُّمْ
جن سے عہد کیا تم نے
مِّنَ الْمُشْرِكِيْنَ
مشرکین میں سے
ثُمَّ
پھر
لَمْ يَنْقُصُوْكُمْ
نہیں انہوں نے کمی کی تم سے
شَيْــــًٔـا
کچھ بھی
وَّلَمْ يُظَاهِرُوْا
اور نہیں انہوں نے پشت پناہی کی
عَلَيْكُمْ
تمہارے خلاف
اَحَدًا
کسی کی
فَاَتِمُّــوْٓا
تو پورا کرو
اِلَيْهِمْ
ان کی طرف
عَهْدَهُمْ
ان کے عہد کو
اِلٰى مُدَّتِهِمْ
ان کی مدت تک
ۭ اِنَّ
بیشک
اللّٰهَ
اللہ تعالیٰ
يُحِبُّ الْمُتَّقِيْنَ
پسند کرتا ہے تقوی والوں کو

بجز اُن مشرکین کے جن سے تم نے معاہد ے کیے پھر انہوں نے اپنے عہد کو پورا کرنے میں تمہارے ساتھ کوئی کمی نہیں کی اور نہ تمہارے خلاف کسی کی مدد کی، تو ایسے لوگوں کے ساتھ تم بھی مدت معاہدہ تک وفا کرو کیونکہ اللہ متقیوں ہی کو پسند کرتا ہے

تفسير

فَاِذَا انْسَلَخَ الْاَشْهُرُ الْحُـرُمُ فَاقْتُلُوا الْمُشْرِكِيْنَ حَيْثُ وَجَدْتُّمُوْهُمْ وَخُذُوْهُمْ وَاحْصُرُوْهُمْ وَاقْعُدُوْا لَهُمْ كُلَّ مَرْصَدٍ ۚ فَاِنْ تَابُوْا وَاَقَامُوا الصَّلٰوةَ وَ اٰتَوُا الزَّكٰوةَ فَخَلُّوْا سَبِيْلَهُمْ ۗ اِنَّ اللّٰهَ غَفُوْرٌ رَّحِيْمٌ

فَاِذَا
پھر جب
انْسَلَخَ
گزر جائیں
الْاَشْهُرُ
مہینے
الْحُرُمُ
حرام
فَاقْتُلُوا
تو قتل کرو
الْمُشْرِكِيْنَ
مشرکوں کو
حَيْثُ
جہاں کہیں
وَجَدْتُّمُــوْهُمْ
پاؤ تم ان کو
وَخُذُوْهُمْ
اور پکڑو ان کو
وَاحْصُرُوْهُمْ
اور گھیرو ان کو
وَاقْعُدُوْا لَهُمْ
اور بیٹھ جاؤ ان کے لیے
كُلَّ
ہر
مَرْصَدٍ ۚ
گھات پر
فَاِنْ
پھر اگر
تَابُوْا
وہ توبہ کرلیں
وَاَقَامُوا
اور قائم کریں
الصَّلٰوةَ
نماز
وَاٰتَوُا الزَّكٰوةَ
اور ادا کریں زکوۃ
فَخَــلُّوْا
تو چھوڑ دو
سَـبِيْلَهُمْ
ان کا راستہ
ۭاِنَّ اللّٰهَ
بیشک اللہ تعالیٰ
غَفُوْرٌ
بخشنے والا
رَّحِيْمٌ
مہربان ہے

پس جب حرام مہینے گزر جائیں تو مشرکین کو قتل کرو جہاں پاؤ اور انہیں پکڑو اور گھیرو اور ہر گھات میں اُن کی خبر لینے کے لیے بیٹھو پھر اگر وہ توبہ کر لیں اور نماز قائم کریں اور زکوٰۃ دیں تو انہیں چھوڑ دو اللہ درگزر کرنے والا اور رحم فرمانے والا ہے

تفسير

وَاِنْ اَحَدٌ مِّنَ الْمُشْرِكِيْنَ اسْتَجَارَكَ فَاَجِرْهُ حَتّٰى يَسْمَعَ كَلَامَ اللّٰهِ ثُمَّ اَبْلِغْهُ مَأْمَنَهٗ ۗ ذٰلِكَ بِاَنَّهُمْ قَوْمٌ لَّا يَعْلَمُوْنَ

وَاِنْ
اور اگر
اَحَدٌ
کوئی ایک
مِّنَ الْمُشْرِكِيْنَ
مشرکین میں سے
اسْتَجَارَكَ
پناہ مانگے تم سے
فَاَجِرْهُ
تم پناہ دے دو اس کو
حَتّٰي
یہاں تک کہ
يَسْمَعَ
وہ سن لے
كَلٰمَ اللّٰهِ
اللہ کا کلام
ثُمَّ
پھر
اَبْلِغْهُ
پہنچا دو اس کو
مَاْمَنَهٗ
اس کی جائے امن میں
ذٰلِكَ
یہ
بِاَنَّهُمْ
بوجہ اس کے کہ بیشک وہ
قَوْمٌ
ایسے لوگ ہیں
لَّا يَعْلَمُوْنَ
جو علم نہیں رکھتے

اور اگر مشرکین میں سے کوئی شخص پناہ مانگ کر تمہارے پاس آنا چاہے (تاکہ اللہ کا کلام سنے) تو اُسے پناہ دے دو یہاں تک کہ وہ اللہ کا کلام سن لے پھر اُسے اس کے مامن تک پہنچا دو یہ اس لیے کرنا چاہیے کہ یہ لوگ علم نہیں رکھتے

تفسير

كَيْفَ يَكُوْنُ لِلْمُشْرِكِيْنَ عَهْدٌ عِنْدَ اللّٰهِ وَعِنْدَ رَسُوْلِهٖۤ اِلَّا الَّذِيْنَ عَاهَدْتُّمْ عِنْدَ الْمَسْجِدِ الْحَـرَامِ ۚ فَمَا اسْتَقَامُوْا لَـكُمْ فَاسْتَقِيْمُوْا لَهُمْ ۗ اِنَّ اللّٰهَ يُحِبُّ الْمُتَّقِيْنَ

كَيْفَ
کس طرح
يَكُوْنُ
ہوسکتا ہے
لِلْمُشْرِكِيْنَ
مشرکین کے لیے
عَهْدٌ
کوئی عہد
عِنْدَ اللّٰهِ
اللہ کے نزدیک
وَعِنْدَ رَسُوْلِهٖٓ
اور اس کے رسول کے نزدیک
اِلَّا
سوائے
الَّذِيْنَ
ان لوگوں کے
عٰهَدْتُّمْ
عہد کیا تم نے
عِنْدَ الْمَسْجِدِ الْحَرَامِ ۚ
مسجد حرام کے پاس
فَمَا اسْتَقَامُوْا
تو جب تک وہ قائم رہیں
لَكُمْ
تمہارے لیے
فَاسْتَقِيْمُوْا
پس تم بھی قائم رہو
لَهُمْ
ان کے لیے
ۭ اِنَّ
بیشک
اللّٰهَ
اللہ تعالیٰ
يُحِبُّ
پسند کرتا ہے
الْمُتَّقِيْنَ
تقوی والوں کو

اِن مشرکین کے لیے اللہ اور اس کے رسول کے نزدیک کوئی عہد آخر کیسے ہوسکتا ہے؟ بجز اُن لوگوں کے جن سے تم نے مسجد حرام کے پاس معاہدہ کیا تھا، تو جب تک وہ تمہارے ساتھ سیدھے رہیں تم بھی ان کے ساتھ سیدھے رہو کیونکہ اللہ متقیوں کو پسند کرتا ہے

تفسير

كَيْفَ وَاِنْ يَّظْهَرُوْا عَلَيْكُمْ لَا يَرْقُبُوْا فِيْكُمْ اِلًّا وَّلَا ذِمَّةً ۗ يُرْضُوْنَـكُمْ بِاَفْوَاهِهِمْ وَتَأْبٰى قُلُوْبُهُمْۚ وَاَكْثَرُهُمْ فٰسِقُوْنَۚ

كَيْفَ
کس طرح
وَاِنْ
اور اگر
يَّظْهَرُوْا
وہ غلبہ پاجائیں
عَلَيْكُمْ
تم پر
لَا يَرْقُبُوْا
نہ لحاظ کریں
فِيْكُمْ
تمہارے معاملے میں
اِلًّا
قرات کا
وَّلَا ذِمَّةً
اور ن ہ کسی معاہدے کا
ۭ يُرْضُوْنَكُمْ
وہ راضی کرتے ہیں تم کو
بِاَفْوَاهِهِمْ
اپنے مونہوں کے ساتھ
وَتَاْبٰي
اور انکار کرتے ہیں
قُلُوْبُهُمْ ۚ
دل ان کے
وَاَكْثَرُهُمْ
اور اکثر ان میں سے
فٰسِقُوْنَ
فاسق ہیں

مگر اِن کے سوا دوسرے مشرکین کے ساتھ کوئی عہد کیسے ہوسکتا ہے جبکہ اُن کا حال یہ ہے کہ تم پر قابو پا جائیں تو نہ تمہارے معاملہ میں کسی قرابت کا لحاظ کریں نہ کسی معاہدہ کی ذمہ داری کا وہ اپنی زبانوں سے تم کو راضی کرنے کی کوشش کرتے ہیں مگر دل ان کے انکار کرتے ہیں اور ان میں سے اکثر فاسق ہیں

تفسير

اِشْتَرَوْا بِاٰيٰتِ اللّٰهِ ثَمَنًا قَلِيْلًا فَصَدُّوْا عَنْ سَبِيْلِهٖ ۗ اِنَّهُمْ سَاۤءَ مَا كَانُوْا يَعْمَلُوْنَ

اِشْتَرَوْا
انہوں نے بیچ ڈالا
بِاٰيٰتِ
آیات کو
اللّٰهِ
اللہ کی
ثَـمَنًا قَلِيْلًا
تھوری قیمت کے عوض
فَصَدُّوْا
پھر انہوں نے روکا
عَنْ سَبِيْلِهٖ
اس کے راستے سے
ۭاِنَّهُمْ
بیشک وہ
سَاۗءَ
کتنا برا ہے
مَا كَانُوْا
جو بھی وہ
يَعْمَلُوْنَ
عمل کر رہے

انہوں نے اللہ کی آیات کے بدلے تھوڑی سی قیمت قبول کر لی پھر اللہ کے راستے میں سدراہ بن کر کھڑے ہو گئے بہت برے کرتوت تھے جو یہ کرتے رہے

تفسير

لَا يَرْقُبُوْنَ فِىْ مُؤْمِنٍ اِلًّا وَّلَا ذِمَّةً ۗ وَاُولٰۤٮِٕكَ هُمُ الْمُعْتَدُوْنَ

لَا يَرْقُبُوْنَ
نہیں وہ لحاظ کرتے
فِيْ
میں
مُؤْمِنٍ
کسی مومن کے بارے میں
اِلًّا
کسی قرابت کا
وَّلَا ذِمَّةً
اور نہ معاہدے کا
ۭ وَاُولٰۗىِٕكَ
اور یہی لوگ
هُمُ
وہ ہیں
الْمُعْتَدُوْنَ
جو حد سے بڑھنے والے ہیں

کسی مومن کے معاملہ میں نہ یہ قرابت کا لحاظ کرتے ہیں اور نہ کسی عہد کی ذمہ داری کا اور زیادتی ہمیشہ انہی کی طرف سے ہوئی ہے

تفسير
کے بارے میں معلومات :
التوبہ
القرآن الكريم:التوبة
آية سجدہ (سجدة):-
سورۃ کا نام (latin):At-Taubah
سورہ نمبر:9
کل آیات:129
کل کلمات:4078
کل حروف:10084
کل رکوعات:16
مقام نزول:مدینہ منورہ
ترتیب نزولی:113
آیت سے شروع:1235