Skip to main content
ARBNDEENIDTRUR
bismillah

اَلَّذِيْنَ كَفَرُوْا وَصَدُّوْا عَنْ سَبِيْلِ اللّٰهِ اَضَلَّ اَعْمَالَهُمْ

اَلَّذِيْنَ كَفَرُوْا
وہ لوگ جنہوں نے کفر کیا
وَصَدُّوْا
اور روکا
عَنْ سَبِيْلِ اللّٰهِ
اللہ کے راستے سے
اَضَلَّ
ضائع کردیئے (اللہ نے)
اَعْمَالَهُمْ
ان کے اعمال

جن لوگوں نے کفر کیا اور اللہ کے راستے سے روکا، اللہ نے ان کے اعمال کو رائیگاں کر دیا

تفسير

وَالَّذِيْنَ اٰمَنُوْا وَعَمِلُوا الصّٰلِحٰتِ وَاٰمَنُوْا بِمَا نُزِّلَ عَلٰى مُحَمَّدٍ وَّهُوَ الْحَقُّ مِنْ رَّبِّهِمْۙ كَفَّرَ عَنْهُمْ سَيِّاٰتِهِمْ وَاَصْلَحَ بَالَهُمْ

وَالَّذِيْنَ اٰمَنُوْا
اور وہ لوگ جو ایمان لائے
وَعَمِلُوا الصّٰلِحٰتِ
اور انہوں نے اچھے عمل کیے
وَاٰمَنُوْا
اور وہ ایمان لائے
بِمَا نُزِّلَ
ساتھ اس کے جو نازل کیا گیا
عَلٰي
پر
مُحَمَّدٍ
محمد (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)
وَّهُوَ الْحَقُّ
اور وہ حق ہے
مِنْ رَّبِّهِمْ ۙ
ان کے رب کی طرف سے
كَفَّرَ عَنْهُمْ
اس نے دور کردیں ان سے
سَـيِّاٰتِهِمْ
ان کی برائیاں
وَاَصْلَحَ بَالَهُمْ
اور درست کردیا ان کا حال

اور جو لوگ ایمان لائے اور جنہوں نے نیک عمل کیے اور اُس چیز کو مان لیا جو محمدؐ پر نازل ہوئی ہے اور ہے وہ سراسر حق اُن کے رب کی طرف سے اللہ نے ان کی برائیاں اُن سے دور کر دیں اور ان کا حال درست کر دیا

تفسير

ذٰلِكَ بِاَنَّ الَّذِيْنَ كَفَرُوْا اتَّبَعُوا الْبَاطِلَ وَاَنَّ الَّذِيْنَ اٰمَنُوا اتَّبَعُوا الْحَقَّ مِنْ رَّبِّهِمْۗ كَذٰلِكَ يَضْرِبُ اللّٰهُ لِلنَّاسِ اَمْثَالَهُمْ

ذٰلِكَ
یہ
بِاَنَّ الَّذِيْنَ
بوجہ اس کے کہ بیشک وہ لوگ
كَفَرُوا
جنہوں نے کفر کیا
اتَّبَعُوا
انہوں نے پیروی کی
الْبَاطِلَ
باطل کی
وَاَنَّ الَّذِيْنَ
اور بیشک وہ لوگ
اٰمَنُوا
جو ایمان لائے
اتَّبَعُوا الْحَقَّ
انہوں نے پیروی کی حق کی
مِنْ رَّبِّهِمْ ۭ
اپنے رب کی طرف سے
كَذٰلِكَ
اسی طرح
يَضْرِبُ اللّٰهُ
بیان کرتا ہے اللہ
لِلنَّاسِ
لوگوں کے لیے
اَمْثَالَهُمْ
ان کی مثالیں۔ ان کے حالات

یہ اس لیے کہ کفر کرنے والوں نے باطل کی پیروی کی اور ایمان لانے والوں نے اُس حق کی پیروی کی جو ان کے رب کی طرف سے آیا ہے اِس طرح اللہ لوگوں کو اُن کی ٹھیک ٹھیک حیثیت بتائے دیتا ہے

تفسير

فَاِذَا لَقِيْتُمُ الَّذِيْنَ كَفَرُوْا فَضَرْبَ الرِّقَابِ ۗ حَتّٰۤى اِذَاۤ اَثْخَنْتُمُوْهُمْ فَشُدُّوا الْوَثَاقَ ۖ فَاِمَّا مَنًّۢا بَعْدُ وَاِمَّا فِدَاۤءً حَتّٰى تَضَعَ الْحَـرْبُ اَوْزَارَهَا ۛ ذٰلِكَ ۛ وَلَوْ يَشَاۤءُ اللّٰهُ لَانْـتَصَرَ مِنْهُمْ وَلٰـكِنْ لِّيَبْلُوَاۡ بَعْضَكُمْ بِبَعْضٍۗ وَالَّذِيْنَ قُتِلُوْا فِىْ سَبِيْلِ اللّٰهِ فَلَنْ يُّضِلَّ اَعْمَالَهُمْ

فَاِذَا
پھر جب
لَقِيْتُمُ الَّذِيْنَ
ملاقات کرو تم ان لوگوں سے
كَفَرُوْا
جنہوں نے کفر کیا
فَضَرْبَ الرِّقَابِ ۭ
تو مارنا ہے گردنوں کا
حَتّىٰٓ
یہاں تک کہ
اِذَآ
جب
اَثْخَنْتُمُوْهُمْ
خوب سختی کرو تم ان سے۔ خوب خون بہا چکو تم ان کا
فَشُدُّوا الْوَثَاقَ ڎ
پھر پکا کرو بندھن کو
فَاِمَّا مَنًّـۢا
پھر خواہ احسان کرو
بَعْدُ
اس کے بعد
وَاِمَّا
اور خواہ
فِدَاۗءً
فدیہ لو
حَتّٰى تَضَعَ الْحَرْبُ
یہاں تک کہ ڈال دے۔ رکھ دے جنگ
اَوْزَارَهَاڃ
اپنے اوزار۔ ہتھیار
ذٰ۩لِكَ ړ
یہ بات
وَلَوْ
اور اگر
يَشَاۗءُ اللّٰهُ
چاہتا اللہ
لَانْتَـصَرَ مِنْهُمْ
البتہ بدلے لے لیتا ان سے
وَلٰكِنْ لِّيَبْلُوَا۟
لیکن تاکہ آزمائے
بَعْضَكُمْ
تم میں سے بعض کو
بِبَعْـضٍ ۭ
ساتھ بعض کے
وَالَّذِيْنَ
اور وہ لوگ
قُتِلُوْا
جو مارے گئے
فِيْ سَبِيْلِ اللّٰهِ
اللہ کے راستے میں
فَلَنْ
تو ہرگز نہ
يُّضِلَّ
ضائع کرے گا
اَعْمَالَهُمْ
ان کے اعمال کو

پس جب اِن کافروں سے تمہاری مڈ بھیڑ ہو تو پہلا کام گردنیں مارنا ہے، یہاں تک کہ جب تم ان کو اچھی طرح کچل دو تب قیدیوں کو مضبوط باندھو، اس کے بعد (تمہیں اختیار ہے) احسان کرو یا فدیے کا معاملہ کر لو، تا آنکہ لڑائی اپنے ہتھیار ڈال دے یہ ہے تمہارے کرنے کا کام اللہ چاہتا تو خود ہی اُن سے نمٹ لیتا، مگر (یہ طریقہ اُس نے اس لیے اختیار کیا ہے) تاکہ تم لوگوں کو ایک دوسرے کے ذریعہ سے آزمائے اور جو لوگ اللہ کی راہ میں مارے جائیں گے اللہ ان کے اعمال کو ہرگز ضائع نہ کرے گا

تفسير

سَيَهْدِيْهِمْ وَيُصْلِحُ بَالَهُمْۚ

سَيَهْدِيْهِمْ
عنقریب وہ رہنمائی کرے گا ان کی
وَيُصْلِحُ
اور اصلاح کردے گا
بَالَهُمْ
ان کے حال کی

وہ ان کی رہنمائی فرمائے گا، ان کا حال درست کر دے گا

تفسير

وَيُدْخِلُهُمُ الْجَـنَّةَ عَرَّفَهَا لَهُمْ

وَيُدْخِلُهُمُ
اور داخل کرے گا ان کو
الْجَــنَّةَ
جنت میں
عَرَّفَهَا
پہچان کرا دی اس کی۔ تعریف کردی اس کی
لَهُمْ
ان کے لیے

اور ان کو اس جنت میں داخل کرے گا جس سے وہ ان کو واقف کرا چکا ہے

تفسير

يٰۤـاَيُّهَا الَّذِيْنَ اٰمَنُوْۤا اِنْ تَـنْصُرُوا اللّٰهَ يَنْصُرْكُمْ وَيُثَبِّتْ اَقْدَامَكُمْ

يٰٓاَيُّهَا الَّذِيْنَ
اے لوگو
اٰمَنُوْٓا
جو ایمان لائے ہو
اِنْ تَنْصُرُوا اللّٰهَ
اگر تم مدد کرو گے اللہ کی
يَنْصُرْكُمْ
وہ مدد کرے گا تمہاری
وَيُثَبِّتْ اَقْدَامَكُمْ
اور جمادے گا تمہارے قدموں کو

اے لوگو جو ایمان لائے ہو، اگر تم اللہ کی مدد کرو گے تو وہ تمہاری مدد کرے گا اور تمہارے قدم مضبوط جما دے گا

تفسير

وَالَّذِيْنَ كَفَرُوْا فَتَعْسًا لَّهُمْ وَاَضَلَّ اَعْمَالَهُمْ

وَالَّذِيْنَ كَفَرُوْا
اور وہ لوگ جنہوں نے کفر کیا
فَتَعْسًا لَّهُمْ
پس تباہی ہے ان کے لیے
وَاَضَلَّ اَعْمَالَهُمْ
اور اس نے بھٹکا دیا ان کے اعمال کو

رہے وہ لوگ جنہوں نے کفر کیا ہے، تو اُن کے لیے ہلاکت ہے اور اللہ نے ان کے اعمال کو بھٹکا دیا ہے

تفسير

ذٰلِكَ بِاَنَّهُمْ كَرِهُوْا مَاۤ اَنْزَلَ اللّٰهُ فَاَحْبَطَ اَعْمَالَهُمْ

ذٰلِكَ بِاَنَّهُمْ
یہ بات بوجہ اس کے کہ بیشک انہوں نے
كَرِهُوْا
ناپسند کیا
مَآ اَنْزَلَ اللّٰهُ
جو نازل فرمایا اللہ نے
فَاَحْبَطَ اَعْمَالَهُمْ
تو اس نے ضائع کردیئے ان کے اعمال

کیونکہ انہوں نے اُس چیز کو ناپسند کیا جسے اللہ نے نازل کیا ہے، لہٰذا اللہ نے اُن کے اعمال ضائع کر دیے

تفسير

اَفَلَمْ يَسِيْرُوْا فِى الْاَرْضِ فَيَنْظُرُوْا كَيْفَ كَانَ عَاقِبَةُ الَّذِيْنَ مِنْ قَبْلِهِمْۗ دَمَّرَ اللّٰهُ عَلَيْهِمْۖ وَلِلْكٰفِرِيْنَ اَمْثَالُهَا

اَفَلَمْ يَسِيْرُوْا
کیا پھر نہیں وہ چلے پھرے
فِي الْاَرْضِ
زمین میں
فَيَنْظُرُوْا
تو وہ دیکھتے
كَيْفَ كَانَ
کس طرح ہوا
عَاقِبَةُ
انجام
الَّذِيْنَ
ان لوگوں کا
مِنْ قَبْلِهِمْ ۭ
جو ان سے پہلے تھے
دَمَّرَ اللّٰهُ
ہلاکت ڈالی اللہ نے
عَلَيْهِمْ ۡ
ان پر
وَلِلْكٰفِرِيْنَ
اور کافروں کے لیے
اَمْثَالُهَا
اس کی مثالیں ہیں

کیا وہ زمین میں چلے پھرے نہ تھے کہ اُن لوگوں کا انجام دیکھتے جو ان سے پہلے گزر چکے ہیں؟ اللہ نے اُن کا سب کچھ اُن پر الٹ دیا، اور ایسے نتائج اِن کافروں کے لیے مقدر ہیں

تفسير
کے بارے میں معلومات :
محمد
القرآن الكريم:محمد
آية سجدہ (سجدة):-
سورۃ کا نام (latin):Muhammad
سورہ نمبر:47
کل آیات:38
کل کلمات:558
کل حروف:2475
کل رکوعات:4
مقام نزول:مدینہ منورہ
ترتیب نزولی:95
آیت سے شروع:4545