Skip to main content
ARBNDEENIDTRUR
bismillah

يَسْـــَٔلُوْنَكَ عَنِ الْاَنْفَالِ ۗ قُلِ الْاَنْفَالُ لِلّٰهِ وَالرَّسُوْلِ ۚ فَاتَّقُوا اللّٰهَ وَاَصْلِحُوْا ذَاتَ بَيْنِكُمْۖ وَاَطِيْعُوا اللّٰهَ وَرَسُوْلَهٗۤ اِنْ كُنْتُمْ مُّؤْمِنِيْنَ

يَسْــــَٔـلُوْنَكَ
سوال کرتے ہیں آپ سے
عَنِ الْاَنْفَالِ ۭ
انفال کے بارے میں۔ غنیمتوں کے بارے میں
قُلِ
کہہ دیجیے
الْاَنْفَالُ
غنیمتیں
لِلّٰهِ
اللہ کے لیے ہیں
وَالرَّسُوْلِ ۚ
اور رسول کے لیے
فَاتَّقُوا
پس ڈرو
اللّٰهَ
اللہ سے
وَاَصْلِحُوْا
اور اصلاح کرو
ذَاتَ بَيْنِكُمْ ۠
اپنے درمیان ذات کی (مراد آپس کے تعلقات درست رکھو)
وَاَطِيْعُوا
اور اطاعت کرو
اللّٰهَ
اللہ کی
وَرَسُوْلَهٗٓ
اور اس کے رسول کی
اِنْ
اگر
كُنْتُمْ
ہو تم
مُّؤْمِنِيْنَ
ایمان لانے والے

تم سے انفال کے متعلق پوچھتے ہیں؟ کہو “یہ انفال تو اللہ اور اُس کے رسُولؐ کے ہیں، پس تم لوگ اللہ سے ڈرو اور اپنے آپس کے تعلقات درست کرو اور اللہ اور اُس کے رسولؐ کی اطاعت کرو اگر تم مومن ہو"

تفسير

اِنَّمَا الْمُؤْمِنُوْنَ الَّذِيْنَ اِذَا ذُكِرَ اللّٰهُ وَجِلَتْ قُلُوْبُهُمْ وَاِذَا تُلِيَتْ عَلَيْهِمْ اٰيٰتُهٗ زَادَتْهُمْ اِيْمَانًا وَّعَلٰى رَبِّهِمْ يَتَوَكَّلُوْنَ ۙ

اِنَّمَا
بیشک
الْمُؤْمِنُوْنَ
مومن
الَّذِيْنَ
وہ لوگ ہیں
اِذَا
جب
ذُكِرَ اللّٰهُ
ذکر کیا جاتا ہے اللہ کا
وَجِلَتْ
ڈر جاتے ہیں
قُلُوْبُهُمْ
دل ان کے
وَاِذَا
اور جب
تُلِيَتْ
پڑھی جاتی ہیں
عَلَيْهِمْ
ان پر
اٰيٰتُهٗ
اس کی آیات
زَادَتْهُمْ
وہ بڑھا دیتی ہیں ان کو
اِيْمَانًا
ایمان میں
وَّعَلٰي رَبِّهِمْ
اور اپنے رب پر
يَتَوَكَّلُوْنَ
وہ توکل کرتے ہیں

سچّے اہل ایمان تو وہ لوگ ہیں جن کے دل اللہ کا ذکر سُن کر لرز جاتے ہیں اور جب اللہ کی آیات ان کے سامنے پڑھی جاتی ہیں تو ان کا ایمان بڑھ جاتا ہے اور وہ اپنے رب پر اعتماد رکھتے ہیں

تفسير

الَّذِيْنَ يُقِيْمُوْنَ الصَّلٰوةَ وَمِمَّا رَزَقْنٰهُمْ يُنْفِقُوْنَۗ

الَّذِيْنَ
وہ لوگ
يُقِيْمُوْنَ
جو قائم کرتے ہیں
الصَّلٰوةَ
نماز
وَمِمَّا
اور اس میں سے جو
رَزَقْنٰهُمْ
رزق دیا ہم نے ان کو
يُنْفِقُوْنَ
وہ خرچ کرتے ہیں

جو نماز قائم کرتے ہیں اور جو کچھ ہم نے ان کو دیا ہے اس میں سے (ہماری راہ میں) خرچ کرتے ہیں

تفسير

اُولٰۤٮِٕكَ هُمُ الْمُؤْمِنُوْنَ حَقًّا ۗ لَهُمْ دَرَجٰتٌ عِنْدَ رَبِّهِمْ وَمَغْفِرَةٌ وَّرِزْقٌ كَرِيْمٌۚ

اُولٰۗىِٕكَ
یہی لوگ ہیں
هُمُ
وہ جو
الْمُؤْمِنُوْنَ
مومن ہیں
حَقًّا ۭ
سچے
لَهُمْ
ان کے لیے
دَرَجٰتٌ
درجے ہیں
عِنْدَ رَبِّهِمْ
ان کے رب کے پاس
وَمَغْفِرَةٌ
اور بخشش
وَّرِزْقٌ
اور رزق ہے
كَرِيْمٌ
عزت والا

ایسے ہی لوگ حقیقی مومن ہیں ان کے لیے ان کے رب کے پاس بڑے درجے ہیں قصوروں سے درگزر ہے اور بہترین رزق ہے

تفسير

كَمَاۤ اَخْرَجَكَ رَبُّكَ مِنْۢ بَيْتِكَ بِالْحَـقِّۖ وَاِنَّ فَرِيْقًا مِّنَ الْمُؤْمِنِيْنَ لَـكٰرِهُوْنَۙ

كَمَآ
جیسا کہ
اَخْرَجَكَ
نکالا تجھ کو
رَبُّكَ
تیرے رب نے
مِنْۢ بَيْتِكَ
تیرے گھر سے
بِالْحَقِّ ۠
حق کے ساتھ
وَاِنَّ
اور بیشک
فَرِيْقًا
ایک گروہ
مِّنَ الْمُؤْمِنِيْنَ
مومنوں میں سے
لَكٰرِهُوْنَ
البتہ ناپسند کرنے والا تھا

(اِس مال غنیمت کے معاملہ میں بھی ویسی ہی صورت پیش آ رہی ہے جیسی اُس وقت پیش آئی تھی جبکہ) تیرا رب تجھے حق کے ساتھ تیرے گھر سے نکال لایا تھا اور مومنوں میں سے ایک گروہ کو یہ سخت ناگوار تھا

تفسير

يُجَادِلُوْنَكَ فِى الْحَـقِّ بَعْدَ مَا تَبَيَّنَ كَاَنَّمَا يُسَاقُوْنَ اِلَى الْمَوْتِ وَهُمْ يَنْظُرُوْنَۗ

يُجَادِلُوْنَكَ
وہ جھگڑ رہے تھے آپ سے
فِي الْحَقِّ
حق میں
بَعْدَ
بعد اس کے
مَا
جو
تَبَيَّنَ
گویا کہ
كَاَنَّمَا
وہ ہانکے جارہے تھے
يُسَاقُوْنَ
موت کی طرف
اِلَى الْمَوْتِ
اور وہ
وَهُمْ
دیکھ رہے تھے
يَنْظُرُوْنَ
دیکھ رہے تھے

وہ اس حق کے معاملہ میں تجھ سے جھگڑ رہے تھے دراں حالے کہ وہ صاف صاف نمایاں ہو چکا تھا ان کا حال یہ تھا کہ گویا وہ آنکھوں دیکھے موت کی طرف ہانکے جا رہے ہیں

تفسير

وَاِذْ يَعِدُكُمُ اللّٰهُ اِحْدَى الطَّاۤٮِٕفَتَيْنِ اَنَّهَا لَـكُمْ وَتَوَدُّوْنَ اَنَّ غَيْرَ ذَاتِ الشَّوْكَةِ تَكُوْنُ لَـكُمْ وَيُرِيْدُ اللّٰهُ اَنْ يُّحِقَّ الْحَـقَّ بِكَلِمٰتِهٖ وَيَقْطَعَ دَابِرَ الْـكٰفِرِيْنَۙ

وَاِذْ
اور جب
يَعِدُكُمُ
وعدہ کررہا تھا تم سے
اللّٰهُ
اللہ
اِحْدَى
ایک کا
الطَّاۗىِٕفَتَيْنِ
دو گروہوں میں سے
اَنَّهَا
بیشک وہ
لَكُمْ
تمہارے لیے ہے
وَتَوَدُّوْنَ
اور تم چاہتے تھے
اَنَّ
بیشک
غَيْرَ
بغیر
ذَاتِ
والے
الشَّوْكَةِ
ہتھیار (والے)
تَكُوْنُ
ہوں
لَكُمْ
تمہارے لیے
وَيُرِيْدُ
اور چاہتا تھا
اللّٰهُ
اللہ
اَنْ
کہ
يُّحِقَّ
ثابت کردے
الْحَقَّ
حق کو
بِكَلِمٰتِهٖ
اپنے کلمات کے ساتھ۔ اپنے ارشادات کے ساتھ
وَيَقْطَعَ
اور کاٹ ڈالے
دَابِرَ
جڑ
الْكٰفِرِيْنَ
کافروں کی

یاد کرو وہ موقع جب کہ اللہ تم سے وعدہ کر رہا تھا کہ دونوں گروہوں میں سے ایک تمہیں مِل جائے گا تم چاہتے تھے کہ کمزور گروہ تمہیں ملے مگر اللہ کا ارادہ یہ تھا کہ اپنے ارشادات سے حق کو حق کر دکھائے اور کافروں کی جڑ کاٹ دے

تفسير

لِيُحِقَّ الْحَـقَّ وَيُبْطِلَ الْبَاطِلَ وَلَوْ كَرِهَ الْمُجْرِمُوْنَۚ

لِيُحِقَّ
تاکہ ثابت کردے
الْحَقَّ
حق کو
وَيُبْطِلَ
اور باطل کردے
الْبَاطِلَ
باطل کو
وَلَوْ
اور اگرچہ
كَرِهَ
ناپسند کریں
الْمُجْرِمُوْنَ
مجرم لوگ

تاکہ حق حق ہو کر رہے اور باطل باطل ہو جائے خواہ مجرموں کو یہ کتنا ہی ناگوار ہو

تفسير

اِذْ تَسْتَغِيْثُوْنَ رَبَّكُمْ فَاسْتَجَابَ لَـكُمْ اَنِّىْ مُمِدُّكُمْ بِاَلْفٍ مِّنَ الْمَلٰۤٮِٕكَةِ مُرْدِفِيْنَ

اِذْ
جب
تَسْتَغِيْثُوْنَ
تم فریاد کر رہے تھے
رَبَّكُمْ
اپنے رب سے
فَاسْتَجَابَ
تو اس نے جواب دیا
لَكُمْ
تم کو
اَنِّىْ
بیشک میں
مُمِدُّكُمْ
میں مدد دینے والا ہوں تم کو
بِاَلْفٍ
ساتھ ایک ہزار کے
مِّنَ الْمَلٰۗىِٕكَةِ
فرشتوں میں سے
مُرْدِفِيْنَ
پیچھے آنے والے۔ مسلسل۔ پے در پے

اور وہ موقع یاد کرو جبکہ تم اپنے رب سے فریاد کر رہے تھے جواب میں اس نے فرمایا کہ میں تمہاری مدد کے لیے پے در پے ایک ہزار فرشتے بھیج رہا ہوں

تفسير

وَمَا جَعَلَهُ اللّٰهُ اِلَّا بُشْرٰى وَلِتَطْمَٮِٕنَّ بِهٖ قُلُوْبُكُمْۚ وَمَا النَّصْرُ اِلَّا مِنْ عِنْدِ اللّٰهِۗ اِنَّ اللّٰهَ عَزِيْزٌ حَكِيْمٌ

وَمَا
اور نہیں
جَعَلَهُ
بنایا اس کو
اللّٰهُ
اللہ نے
اِلَّا
مگر
بُشْرٰي
خوشخبری
وَلِتَطْمَىِٕنَّ
اور تاکہ مطمئن ہوجائیں
بِهٖ
ساتھ اس کے
قُلُوْبُكُمْ ۭ
دل تمہارے
وَمَا
اور نہیں
النَّصْرُ
مدد
اِلَّا
مگر
مِنْ عِنْدِ اللّٰهِ ۭ
اللہ کے پاس سے
اِنَّ اللّٰهَ
بیشک اللہ تعالیٰ
عَزِيْزٌ
غالب ہے
حَكِيْمٌ
حکمت والا ہے

یہ بات اللہ نے تمہیں صرف اس لیے بتا دی کہ تمہیں خوشخبری ہو اور تمہارے دل اس سے مطمئن ہو جائیں، ورنہ مدد تو جب بھی ہوتی ہے اللہ ہی کی طرف سے ہوتی ہے، یقیناً اللہ زبردست اور دانا ہے

تفسير
کے بارے میں معلومات :
الانفال
القرآن الكريم:الأنفال
آية سجدہ (سجدة):-
سورۃ کا نام (latin):Al-Anfal
سورہ نمبر:8
کل آیات:75
کل کلمات:1075
کل حروف:5080
کل رکوعات:10
مقام نزول:مدینہ منورہ
ترتیب نزولی:88
آیت سے شروع:1160