Skip to main content
ARBNDEENIDTRUR
bismillah

سُوْرَةٌ اَنْزَلْنٰهَا وَفَرَضْنٰهَا وَاَنْزَلْنَا فِيْهَاۤ اٰيٰتٍۭ بَيِّنٰتٍ لَّعَلَّكُمْ تَذَكَّرُوْنَ

اَنْزَلْنٰهَا
اور فرض کیا ہم نے اس کو
وَفَرَضْنٰهَا
اور نازل کیں ہم نے
وَاَنْزَلْنَا
اس میں
فِيْهَآ
آیتیں کھلی کھلی
اٰيٰتٍۢ بَيِّنٰتٍ
تاکہ تم
لَّعَلَّكُمْ
تم نصیحت پکڑو۔ تم سبق لو
تَذَكَّرُوْنَ
تم نصیحت پکڑو۔ تم سبق لو

یہ ایک سورت ہے جس کو ہم نے نازل کیا ہے، اور اسے ہم نے فرض کیا ہے، اور اس میں ہم نے صاف صاف ہدایات نازل کی ہیں، شاید کہ تم سبق لو

تفسير

اَلزَّانِيَةُ وَالزَّانِىْ فَاجْلِدُوْا كُلَّ وَاحِدٍ مِّنْهُمَا مِائَةَ جَلْدَةٍۖوَّلَا تَأْخُذْكُمْ بِهِمَا رَأْفَةٌ فِىْ دِيْنِ اللّٰهِ اِنْ كُنْتُمْ تُؤْمِنُوْنَ بِاللّٰهِ وَالْيَوْمِ الْاٰخِرِۚ وَلْيَشْهَدْ عَذَابَهُمَا طَاۤٮِٕفَةٌ مِّنَ الْمُؤْمِنِيْنَ

اَلزَّانِيَةُ
زانیہ عورت
وَالزَّانِيْ
اور زانی مرد
فَاجْلِدُوْا
پس کوڑے مارو
كُلَّ
ہر
وَاحِدٍ مِّنْهُمَا
ایک کو ان دونوں میں سے
مِائَةَ
سو
جَلْدَةٍ ۠
کوڑے
وَّلَا
اور نہ
تَاْخُذْكُمْ
پکڑے تم کو
بِهِمَا
ان دونوں کے بارے میں
رَاْفَةٌ
کوئی ترس
فِيْ دِيْنِ اللّٰهِ
اللہ کے دین میں
اِنْ كُنْتُمْ
اگر ہو تم
تُؤْمِنُوْنَ باللّٰهِ
تم ایمان رکھتے اللہ پر
وَالْيَوْمِ الْاٰخِرِ ۚ
اور یوم آخرت پر
وَلْيَشْهَدْ
اور چاہیے کہ حاضر ہو
عَذَابَهُمَا
ان دونوں کی سزا کے وقت
طَاۗىِٕفَةٌ
ایک گروہ
مِّنَ الْمُؤْمِنِيْنَ
اہل ایمان میں سے

زانیہ عورت اور زانی مرد، دونوں میں سے ہر ایک کو سو کوڑے مارو اور ان پر ترس کھانے کا جذبہ اللہ کے دین کے معاملے میں تم کو دامن گیر نہ ہو اگر تم اللہ تعالیٰ اور روز آخر پر ایمان رکھتے ہو اور ان کو سزا دیتے وقت اہل ایمان کا ایک گروہ موجود رہے

تفسير

اَلزَّانِىْ لَا يَنْكِحُ اِلَّا زَانِيَةً اَوْ مُشْرِكَةً ۖ وَّ الزَّانِيَةُ لَا يَنْكِحُهَاۤ اِلَّا زَانٍ اَوْ مُشْرِكٌ ۚ وَحُرِّمَ ذٰلِكَ عَلَى الْمُؤْمِنِيْنَ

اَلزَّانِيْ
زنا کرنے والا مرد
لَا يَنْكِحُ
نہ نکاح کرے
اِلَّا زَانِيَةً
مگر زانیہ سے
اَوْ مُشْرِكَةً ۡ
یا مشرک عورت سے
وَّالزَّانِيَةُ
اور زنا کرنے والی عورت
لَا يَنْكِحُهَآ
نہ نکاح کرے اس سے
اِلَّا زَانٍ
مگر زانی
اَوْ مُشْرِكٌ ۚ
یا مشرک
وَحُرِّمَ
اور حرام کردیا گیا
ذٰلِكَ
یہ
عَلَي الْمُؤْمِنِيْنَ
ایمان والوں پر

زانی نکاح نہ کرے مگر زانیہ کے ساتھ یا مشرکہ کے ساتھ اور زانیہ کے ساتھ نکاح نہ کرے مگر زانی یا مشرک اور یہ حرام کر دیا گیا ہے اہل ایمان پر

تفسير

وَالَّذِيْنَ يَرْمُوْنَ الْمُحْصَنٰتِ ثُمَّ لَمْ يَأْتُوْا بِاَرْبَعَةِ شُهَدَاۤءَ فَاجْلِدُوْهُمْ ثَمٰنِيْنَ جَلْدَةً وَّلَا تَقْبَلُوْا لَهُمْ شَهَادَةً اَبَدًا ۚ وَاُولٰۤٮِٕكَ هُمُ الْفٰسِقُوْنَ ۙ

وَالَّذِيْنَ
اور وہ لوگ
يَرْمُوْنَ
جو تہمت لگائیں۔ الزام لگائیں (زنا کا)
الْمُحْصَنٰتِ
پاک دامن عورتوں پر
ثُمَّ
پھر
لَمْ
نہ
يَاْتُوْا
لائیں
بِاَرْبَعَةِ
چار
شُهَدَاۗءَ
گواہ
فَاجْلِدُوْهُمْ
تو کوڑے مارو ان کو
ثَمٰنِيْنَ
اسی
جَلْدَةً
کوڑے
وَّلَا تَــقْبَلُوْا
اور نہ تم قبول کرو
لَهُمْ
ان کے لیے
شَهَادَةً اَبَدًا ۚ
گواہی کو کبھی بھی
وَاُولٰۗىِٕكَ
اور یہی لوگ ہیں
هُمُ الْفٰسِقُوْنَ
وہ جو فاسق ہیں

اور جو لوگ پاک دامن عورتوں پر تہمت لگائیں، پھر چار گواہ لے کر نہ آئیں، ان کو اسی کوڑے مارو اور ان کی شہادت کبھی قبول نہ کرو، اور وہ خود ہی فاسق ہیں

تفسير

اِلَّا الَّذِيْنَ تَابُوْا مِنْۢ بَعْدِ ذٰلِكَ وَاَصْلَحُوْاۚ فَاِنَّ اللّٰهَ غَفُوْرٌ رَّحِيْمٌ

اِلَّا الَّذِيْنَ
سوائے ان لوگوں کے
تَابُوْا
جنہوں نے توبہ کی
مِنْۢ بَعْدِ ذٰلِكَ
اس کے بعد
وَاَصْلَحُوْا ۚ
اور اصلاح کی
فَاِنَّ اللّٰهَ
تو بیشک اللہ تعالیٰ
غَفُوْرٌ
بخشنے والا
رَّحِيْمٌ
مہربان ہے

سوائے اُن لوگوں کے جو اس حرکت کے بعد تائب ہو جائیں اور اصلاح کر لیں کہ اللہ ضرور (اُن کے حق میں) غفور و رحیم ہے

تفسير

وَالَّذِيْنَ يَرْمُوْنَ اَزْوَاجَهُمْ وَلَمْ يَكُنْ لَّهُمْ شُهَدَاۤءُ اِلَّاۤ اَنْفُسُهُمْ فَشَهَادَةُ اَحَدِهِمْ اَرْبَعُ شَهٰدٰتٍۭ بِاللّٰهِۙ اِنَّهٗ لَمِنَ الصّٰدِقِيْنَ

وَالَّذِيْنَ
اور وہ لوگ
يَرْمُوْنَ
جو الزام لگاتے ہیں
اَزْوَاجَهُمْ
اپنی بیویوں پر
وَلَمْ
اور نہیں
يَكُنْ
ہیں
لَّهُمْ
ان کے لیے
شُهَدَاۗءُ
گواہ
اِلَّآ اَنْفُسُهُمْ
مگر ان کے نفس
فَشَهَادَةُ
تو گواہی ہوگی
اَحَدِهِمْ
ان میں سے ایک کی
اَرْبَعُ شَهٰدٰتٍۢ
چار گواہیاں
بِاللّٰهِ ۙ
اللہ کے ساتھ
اِنَّهٗ
بیشک وہ
لَمِنَ الصّٰدِقِيْنَ
البتہ سچوں میں سے ہے

اور جو لوگ اپنی بیویوں پر الزام لگائیں اور ان کے پاس خود ان کے اپنے سوا دوسرے کوئی گواہ نہ ہوں تو اُن میں سے ایک شخص کی شہادت (یہ ہے کہ وہ) چار مرتبہ اللہ کی قسم کھا کر گواہی دے کہ وہ (اپنے الزام میں) سچا ہے

تفسير

وَالْخَـامِسَةُ اَنَّ لَـعْنَتَ اللّٰهِ عَلَيْهِ اِنْ كَانَ مِنَ الْكٰذِبِيْنَ

وَالْخَامِسَةُ
اور پانچویں مرتبہ
اَنَّ لَعْنَتَ
بیشک لعنت ہو
اللّٰهِ
اللہ کی
عَلَيْهِ
اس پر
اِنْ كَانَ
اگر ہے وہ
مِنَ الْكٰذِبِيْنَ
جھوٹوں میں سے

اور پانچویں بار کہے کہ اُس پر اللہ کی لعنت ہو اگر وہ (اپنے الزام میں) جھوٹا ہو

تفسير

وَيَدْرَؤُا عَنْهَا الْعَذَابَ اَنْ تَشْهَدَ اَرْبَعَ شَهٰدٰتٍۢ بِاللّٰهِۙ اِنَّهٗ لَمِنَ الْكٰذِبِيْنَۙ

وَيَدْرَؤُا
اور دور کرتا ہے۔ ٹال سکتا ہے
عَنْهَا
اس سے (اس عورت سے)
الْعَذَابَ
عذاب کو
اَنْ تَشْهَدَ
اگر وہ گواہی دے
اَرْبَعَ
چار
شَهٰدٰتٍۢ
گواہیاں
بِاللّٰهِ ۙ
اللہ کے ساتھ (اللہ کے نام کے ساتھ)
اِنَّهٗ
بیشک وہ
لَمِنَ
البتہ سے
الْكٰذِبِيْنَ
جھوٹوں میں (سے) ہے

اور عورت سے سزا اس طرح ٹل سکتی ہے کہ وہ چار مرتبہ اللہ کی قسم کھا کر شہادت دے کہ یہ شخص (اپنے الزام میں) جھوٹا ہے

تفسير

وَالْخَـامِسَةَ اَنَّ غَضَبَ اللّٰهِ عَلَيْهَاۤ اِنْ كَانَ مِنَ الصّٰدِقِيْنَ

وَالْخَامِسَةَ
اور پانچویں دفعہ (کی گواہی)
اَنَّ غَضَبَ اللّٰهِ
بیشک غضب (ہو) اللہ کا
عَلَيْهَآ
اس پر
اِنْ
اگر
كَانَ
ہے وہ (مرد)
مِنَ الصّٰدِقِيْنَ
سچوں میں سے

اور پانچویں مرتبہ کہے کہ اُس بندی پر اللہ کا غضب ٹوٹے اگر وہ (اپنے الزام میں) سچا ہو

تفسير

وَلَوْلَا فَضْلُ اللّٰهِ عَلَيْكُمْ وَرَحْمَتُهٗ وَاَنَّ اللّٰهَ تَوَّابٌ حَكِيْمٌ

وَلَوْلَا
اور اگر نہ
فَضْلُ اللّٰهِ
اللہ کا فضل ہوتا
عَلَيْكُمْ
تم پر
وَرَحْمَتُهٗ
اور اس کی رحمت
وَاَنَّ اللّٰهَ
اور بیشک اللہ تعالیٰ
تَوَّابٌ
توبہ قبول کرنے والا ہے
حَكِيْمٌ
حکمت والا ہے

تم لوگوں پر اللہ کا فضل اور اس کا رحم نہ ہوتا اور یہ بات نہ ہوتی کہ اللہ بڑا التفات فرمانے والا اور حکیم ہے، تو (بیویوں پر الزام کا معاملہ تمہیں بڑی پیچیدگی میں ڈال دیتا)

تفسير
کے بارے میں معلومات :
النور
القرآن الكريم:النور
آية سجدہ (سجدة):-
سورۃ کا نام (latin):An-Nur
سورہ نمبر:24
کل آیات:64
کل کلمات:1317
کل حروف:5596
کل رکوعات:9
مقام نزول:مدینہ منورہ
ترتیب نزولی:102
آیت سے شروع:2791