Skip to main content
ARBNDEENIDTRUR

الَّذِيْنَ يَذْكُرُوْنَ اللّٰهَ قِيَامًا وَّقُعُوْدًا وَّعَلٰى جُنُوْبِهِمْ وَيَتَفَكَّرُوْنَ فِىْ خَلْقِ السَّمٰوٰتِ وَالْاَرْضِۚ رَبَّنَا مَا خَلَقْتَ هٰذَا بَاطِلًا ۚ سُبْحٰنَكَ فَقِنَا عَذَابَ النَّارِ

الَّذِيْنَ
یہ وہ لوگ ہیں
يَذْكُرُوْنَ
جو یاد کرتے ہیں
اللّٰهَ
اللہ کو
قِيٰمًا
کھڑی حالت میں
وَّقُعُوْدًا
اور بیٹھی حالت میں
وَّعَلٰي جُنُوْبِھِمْ
اور اوپر اپنے پہلوؤں کے۔ کروٹوں کے
وَيَتَفَكَّرُوْنَ
اور غور و فکر کرتے ہیں
فِيْ خَلْقِ السَّمٰوٰتِ وَالْاَرْضِ ۚ
آسمانوں اور زمین کی پیدائش میں (وہ کہہ اٹھتے ہیں)
رَبَّنَا
اے ہمارے رب
مَا
نہیں
خَلَقْتَ
تو نے پیدا کیا
هٰذَا
یہ (سب)
بَاطِلًا ۚ
باطل۔ ناحق۔ بےفائدہ۔ بےمقصد
سُبْحٰنَكَ
پاک ہے تو
فَقِنَا
پس بچا ہم کو
عَذَابَ النَّارِ
آگ کے عذاب سے

جو اٹھتے، بیٹھتے اور لیٹتے، ہر حال میں خدا کو یاد کرتے ہیں اور آسمان و زمین کی ساخت میں غور و فکر کرتے ہیں (وہ بے اختیار بو ل اٹھتے ہیں) "پروردگار! یہ سب کچھ تو نے فضول اور بے مقصد نہیں بنایا ہے، تو پاک ہے اس سے کہ عبث کام کرے پس اے رب! ہمیں دوزخ کے عذاب سے بچا لے

تفسير

رَبَّنَاۤ اِنَّكَ مَنْ تُدْخِلِ النَّارَ فَقَدْ اَخْزَيْتَهٗ ۗ وَمَا لِلظّٰلِمِيْنَ مِنْ اَنْصَارٍ

رَبَّنَآ
اے ہمارے رب
اِنَّكَ
بیشک تو
مَنْ
جس کو
تُدْخِلِ النَّارَ
تو داخل کرے گا آگ میں
فَقَدْ
تو تحقیق
اَخْزَيْتَهٗ ۭ
تو نے رسوا کیا اس کو
وَمَا
اور نہیں
لِلظّٰلِمِيْنَ
ظالموں کے لیے
مِنْ اَنْصَارٍ
کوئی مددگار

تو نے جسے دوزخ میں ڈالا اسے در حقیقت بڑی ذلت و رسوائی میں ڈال دیا، اور پھر ایسے ظالموں کا کوئی مدد گار نہ ہوگا

تفسير

رَبَّنَاۤ اِنَّنَا سَمِعْنَا مُنَادِيًا يُّنَادِىْ لِلْاِيْمَانِ اَنْ اٰمِنُوْا بِرَبِّكُمْ فَاٰمَنَّا ۖ رَبَّنَا فَاغْفِرْ لَنَا ذُنُوْبَنَا وَكَفِّرْ عَنَّا سَيِّاٰتِنَا وَتَوَفَّنَا مَعَ الْاَبْرَارِۚ

رَبَّنَآ
اے ہمارے رب
اِنَّنَا
بیشکم ہم ہیں
سَمِعْنَا
سنا ہم نے
مُنَادِيًا
ایک پکارنے والے کو
يُّنَادِيْ
پکارتا ہے۔ تھا
لِلْاِيْمَانِ
ایمان کے لیے
اَنْ
کہ
اٰمِنُوْا
ایمان لے آؤ
بِرَبِّكُمْ
اپنے رب کے ساتھ
فَاٰمَنَّاڰ
تو ایمان لائے ہم
رَبَّنَا
اے ہمارے رب
فَاغْفِرْ لَنَا
پس بخش دے ہمارے لیے
ذُنُوْبَنَا
ہمارے گناہ
وَكَفِّرْ
اور دور کردے
عَنَّا
ہم سے
سَيِّاٰتِنَا
ہماری برائیاں
وَتَوَفَّنَا
اور فوت کر ہمیں
مَعَ الْاَبْرَارِ
ساتھ نیک لوگوں کے

مالک! ہم نے ایک پکارنے والے کو سنا جو ایمان کی طرف بلاتا تھا اور کہتا تھا کہ اپنے رب کو مانو ہم نے اس کی دعوت قبول کر لی، پس اے ہمارے آقا! جو قصور ہم سے ہوئے ہیں ان سے درگزر فرما، جو برائیاں ہم میں ہیں انہیں دور کر دے اور ہمارا خاتمہ نیک لوگوں کے ساتھ کر

تفسير

رَبَّنَا وَاٰتِنَا مَا وَعَدْتَّنَا عَلٰى رُسُلِكَ وَلَا تُخْزِنَا يَوْمَ الْقِيٰمَةِ ۗ اِنَّكَ لَا تُخْلِفُ الْمِيْعَادَ

رَبَّنَا
اے ہمارے رب
وَاٰتِنَا
اور دے ہم کو
مَا وَعَدْتَّنَا
جو وعدہ کیا تم نے ہم سے
عَلٰي
اوپر
رُسُلِكَ
اپنے رسولوں کے
وَلَا
اور نہ
تُخْزِنَا
تو رسوا کر ہم کو
يَوْمَ الْقِيٰمَةِ ۭ
قیامت کے دن
اِنَّكَ
بیشک تو
لَا
نہیں
تُخْلِفُ
تو خلاف کرے گا
الْمِيْعَادَ
وعدے کو

خداوندا! جو وعدے تو نے اپنے رسولوں کے ذریعہ سے کیے ہیں اُن کو ہمارے ساتھ پورا کر اور قیامت کے دن ہمیں رسوائی میں نہ ڈال، بے شک تو اپنے وعدے کے خلاف کرنے والا نہیں ہے"

تفسير

فَاسْتَجَابَ لَهُمْ رَبُّهُمْ اَنِّىْ لَاۤ اُضِيْعُ عَمَلَ عَامِلٍ مِّنْكُمْ مِّنْ ذَكَرٍ اَوْ اُنْثٰىۚ بَعْضُكُمْ مِّنْۢ بَعْضٍۚ فَالَّذِيْنَ هَاجَرُوْا وَاُخْرِجُوْا مِنْ دِيَارِهِمْ وَاُوْذُوْا فِىْ سَبِيْلِىْ وَقٰتَلُوْا وَقُتِلُوْا لَاُكَفِّرَنَّ عَنْهُمْ سَيِّاٰتِهِمْ وَلَاُدْخِلَنَّهُمْ جَنّٰتٍ تَجْرِىْ مِنْ تَحْتِهَا الْاَنْهٰرُۚ ثَوَابًا مِّنْ عِنْدِ اللّٰهِ ۗ وَ اللّٰهُ عِنْدَهٗ حُسْنُ الثَّوَابِ

فَاسْتَجَابَ
تو قبول کرلیا
لَھُمْ
ان کے لیے
رَبُّھُمْ
ان کے رب نے
اَنِّىْ
بیشک میں
لَآ اُضِيْعُ
نہیں میں ضائع کروں گا
عَمَلَ
عمل کو
عَامِلٍ
کسی عمل کرنے والے کا
مِّنْكُمْ
تم میں سے
مِّنْ ذَكَرٍ
خواہ کوئی مرد ہو
اَوْ
یا
اُنْثٰى ۚ
عورت
بَعْضُكُمْ
بعض تم میں سے
مِّنْۢ
سے
بَعْضٍ ۚ
بعض (سے) ہیں
فَالَّذِيْنَ
تو وہ لوگ
ھَاجَرُوْا
جنہوں نے ہجرت کی
وَاُخْرِجُوْا
اور وہ نکالے گئے
مِنْ دِيَارِھِمْ
اپنے گھروں سے
وَاُوْذُوْا
اور وہ اذیت دیے گئے۔ ستائے گئے
فِيْ سَبِيْلِيْ
میری راہ میں
وَقٰتَلُوْا
اور انہوں نے جنگ کی
وَقُتِلُوْا
اور وہ مارے گئے
لَاُكَفِّرَنَّ
البتہ میں ضرور دور کروں گا
عَنْھُمْ
ان سے
سَيِّاٰتِھِمْ
برائیاں ان کی
وَلَاُدْخِلَنَّھُمْ
اور البتہ میں ضرور داخل کروں گا ان کو
جَنّٰتٍ
باغات میں
تَجْرِيْ
بہتی ہیں
مِنْ
سے
تَحْتِھَا الْاَنْھٰرُ ۚ
ان کے نیچے نہریں
ثَوَابًا
بدلہ ہے۔ عطا ہے
مِّنْ عِنْدِ اللّٰهِ ۭ
اللہ کے پاس سے۔ اللہ کی جناب سے
وَاللّٰهُ
اور اللہ
عِنْدَهٗ
اس کے پاس
حُسْنُ الثَّوَابِ
اچھا بدلہ ہے

جواب میں ان کے رب نے فرمایا، "میں تم میں سے کسی کا عمل ضائع کرنے والا نہیں ہوں خواہ مرد ہو یا عورت، تم سب ایک دوسرے کے ہم جنس ہو لہٰذا جن لوگوں نے میری خاطر اپنے وطن چھوڑے اور جو میر ی راہ میں اپنے گھروں سے نکالے گئے اور ستائے گئے اور میرے لیے لڑے اور مارے گئے اُن کے سب قصور میں معاف کر دوں گا اور انہیں ایسے باغوں میں داخل کروں گا جن کے نیچے نہریں بہتی ہوں گی یہ اُن کی جزا ہے اللہ کے ہاں اور بہترین جزا اللہ ہی کے پاس ہے"

تفسير

لَا يَغُرَّنَّكَ تَقَلُّبُ الَّذِيْنَ كَفَرُوْا فِى الْبِلَادِۗ

لَا
نہ
يَغُرَّنَّكَ
دھوکے میں ڈالے تجھ کو
تَقَلُّبُ
چلنا پھرنا
الَّذِيْنَ
ان لوگوں کو
كَفَرُوْا
جنہوں نے کفر کیا
فِي الْبِلَادِ
ملکوں میں۔ شہروں میں

اے نبیؐ! دنیا کے ملکوں میں خدا کے نافرمان لوگوں کی چلت پھرت تمہیں کسی دھوکے میں نہ ڈالے

تفسير

مَتَاعٌ قَلِيْلٌۗ ثُمَّ مَأْوٰٮهُمْ جَهَنَّمُۗ وَ بِئْسَ الْمِهَادُ

مَتَاعٌ
فائدہ ہے
قَلِيْلٌ ۣ
تھوڑا سا
ثُمَّ
پھر
مَاْوٰىھُمْ
ٹھکانا ان کا
جَهَنَّمُ ۭ
جہنم ہے
وَبِئْسَ
اور کتنا برا ہے
الْمِھَادُ
ٹھکانہ

یہ محض چند روزہ زندگی کا تھوڑا سا لطف ہے، پھر یہ سب جہنم میں جائیں گے جو بدترین جائے قرار ہے

تفسير

لٰكِنِ الَّذِيْنَ اتَّقَوْا رَبَّهُمْ لَهُمْ جَنّٰتٌ تَجْرِىْ مِنْ تَحْتِهَا الْاَنْهٰرُ خٰلِدِيْنَ فِيْهَا نُزُلًا مِّنْ عِنْدِ اللّٰهِۗ وَمَا عِنْدَ اللّٰهِ خَيْرٌ لِّلْاَبْرَارِ

قَلِيْلٌ
پھر
ثُمَّ
ان کا ٹھکانہ
مَاْوٰىھُمْ
دوزخ
جَهَنَّمُ
اور کتنا برا
وَبِئْسَ
بچھونا ( آرام کرنا)
الْمِھَادُ
بچھونا ( آرام کرنا)

برعکس اس کے جو لوگ اپنے رب سے ڈرتے ہوئے زندگی بسر کرتے ہیں ان کے لیے ایسے باغ ہیں جن کے نیچے نہریں بہتی ہیں، ان باغوں میں وہ ہمیشہ رہیں گے، اللہ کی طرف سے یہ سامان ضیافت ہے ان کے لیے، اور جو کچھ اللہ کے پاس ہے نیک لوگوں کے لیے وہی سب سے بہتر ہے

تفسير

وَاِنَّ مِنْ اَهْلِ الْكِتٰبِ لَمَنْ يُّؤْمِنُ بِاللّٰهِ وَمَاۤ اُنْزِلَ اِلَيْكُمْ وَمَاۤ اُنْزِلَ اِلَيْهِمْ خٰشِعِيْنَ لِلّٰهِ ۙ لَا يَشْتَرُوْنَ بِاٰيٰتِ اللّٰهِ ثَمَنًا قَلِيْلًا ۗ اُولٰۤٮِٕكَ لَهُمْ اَجْرُهُمْ عِنْدَ رَبِّهِمْۗ اِنَّ اللّٰهَ سَرِيْعُ الْحِسَابِ

وَاِنَّ
اور بیشک
مِنْ اَھْلِ الْكِتٰبِ
اہل کتاب میں سے
لَمَنْ
البتہ جو
يُّؤْمِنُ
ایمان رکھتا ہے
بِاللّٰهِ
اللہ پر
وَمَآ
اور جو
اُنْزِلَ
نازل کیا گیا
اِلَيْكُمْ
تمہاری طرف
وَمَآ
اور جو
اُنْزِلَ
نازل کیا گیا
اِلَيْھِمْ
ان کی طرف
خٰشِعِيْنَ
ڈرنے والے ہیں
لِلّٰهِ ۙ
اللہ کے لیے
لَا
نہیں
يَشْتَرُوْنَ
بھیجتے۔ وہ لیتے
بِاٰيٰتِ اللّٰهِ
بدلے اللہ کی آیات
ثَـمَنًا قَلِيْلًا ۭ
تھوڑے پیسوں کے عوض۔ پیسے تھوڑے
اُولٰۗىِٕكَ
یہی لوگ
لَھُمْ
ان کے لی ہے
اَجْرُھُمْ
اجر ان کا
عِنْدَ رَبِّھِمْ ۭ
ان کے رب کے پاس ہے
اِنَّ اللّٰهَ
بیشک اللہ
سَرِيْعُ
جلد لینے والا ہے
الْحِسَابِ
حساب

اہل کتاب میں بھی کچھ لوگ ایسے ہیں جو اللہ کو مانتے ہیں، اس کتاب پر ایمان لاتے ہیں جو تمہاری طرف بھیجی گئی ہے اوراُس کتاب پربھی ایمان رکھتے ہیں جو اس سے پہلے خود ان کی طرف بھیجی گئی تھی، اللہ کے آگے جھکے ہوئے ہیں، اور اللہ کی آیات کو تھوڑی سی قیمت پر بیچ نہیں دیتے ان کا اجر ان کے رب کے پاس ہے اور اللہ حساب چکانے میں دیر نہیں لگاتا

تفسير

يٰۤـاَيُّهَا الَّذِيْنَ اٰمَنُوا اصْبِرُوْا وَصَابِرُوْا وَرَابِطُوْاۗ وَاتَّقُوا اللّٰهَ لَعَلَّكُمْ تُفْلِحُوْنَ

يٰٓاَيُّھَا الَّذِيْنَ
اے لوگو
اٰمَنُوا
جو ایمان لائے ہو
اصْبِرُوْا
صبر کرو
وَصَابِرُوْا
اور مقابلے پر صبر کرو۔ باہم صبر کرو
وَرَابِطُوْا ۣ
اور تیار رہو۔ آمادہ رہو۔ باہم رابطہ رکھو
وَاتَّقُوا اللّٰهَ
اور ڈرو اللہ سے
لَعَلَّكُمْ
تاکہ تم
تُفْلِحُوْنَ
تم فلاح پاجاؤ

اے لوگو جو ایمان لائے ہو، صبر سے کام لو، باطل پرستوں کے مقابلہ میں پا مردی دکھاؤ، حق کی خدمت کے لیے کمر بستہ رہو، اور اللہ سے ڈرتے رہو، امید ہے کہ فلاح پاؤ گے

تفسير