Skip to main content
ARBNDEENIDTRUR
bismillah

يٰۤـاَيُّهَا النَّبِىُّ اتَّقِ اللّٰهَ وَلَا تُطِعِ الْكٰفِرِيْنَ وَالْمُنٰفِقِيْنَ ۗ اِنَّ اللّٰهَ كَانَ عَلِيْمًا حَكِيْمًا ۙ

يٰٓاَيُّهَا النَّبِيُّ
اے نبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)
اتَّقِ اللّٰهَ
اللہ کا تقوی اختیار کیجیے
وَلَا تُطِـعِ الْكٰفِرِيْنَ
اور نہ اطاعت کیجیے کافروں کی
وَالْمُنٰفِقِيْنَ ۭ
اور منافقوں کی
اِنَّ اللّٰهَ
بیشک اللہ تعالیٰ
كَانَ
ہے
عَلِيْمًا
علم والا
حَكِيْمًا
حکمت والا

اے نبیؐ! اللہ سے ڈرو اور کفار و منافقین کی اطاعت نہ کرو، حقیقت میں علیم اور حکیم تو اللہ ہی ہے

تفسير

وَّاتَّبِعْ مَا يُوْحٰۤى اِلَيْكَ مِنْ رَّبِّكَ ۗ اِنَّ اللّٰهَ كَانَ بِمَا تَعْمَلُوْنَ خَبِيْرًا ۙ

وَّاتَّبِعْ
اور پیروی کیجیے
مَا يُوْحٰٓى
اس کی جو وحی کی جاتی ہے
اِلَيْكَ
آپ کی طرف
مِنْ رَّبِّكَ ۭ
آپ کے رب کی طرف سے
اِنَّ اللّٰهَ
بیشک اللہ تعالیٰ
كَانَ
ہے
بِمَا تَعْمَلُوْنَ
ساتھ اس کے جو تم عمل کرتے ہو
خَبِيْرًا
خبر رکھنے والا

پیروی کرو اُس بات کی جس کا اشارہ تمہارے رب کی طرف سے تمہیں کیا جا رہا ہے، اللہ ہر اُس بات سے باخبر ہے جو تم لوگ کرتے ہو

تفسير

وَّتَوَكَّلْ عَلَى اللّٰهِ ۗ وَكَفٰى بِاللّٰهِ وَكِيْلًا

وَّتَوَكَّلْ
اور توکل کیجیے
عَلَي اللّٰهِ ۭ
اللہ پر
وَكَفٰي باللّٰهِ
اور کافی ہے اللہ تعالیٰ
وَكِيْلًا
کارساز

اللہ پر توکل کرو، اللہ ہی وکیل ہونے کے لیے کافی ہے

تفسير

مَا جَعَلَ اللّٰهُ لِرَجُلٍ مِّنْ قَلْبَيْنِ فِىْ جَوْفِهٖ ۚ وَمَا جَعَلَ اَزْوَاجَكُمُ الّٰۤـئِْ تُظٰهِرُوْنَ مِنْهُنَّ اُمَّهٰتِكُمْ ۚ وَمَا جَعَلَ اَدْعِيَاۤءَكُمْ اَبْنَاۤءَكُمْ ۗ ذٰ لِكُمْ قَوْلُـكُمْ بِاَ فْوَاهِكُمْ ۗ وَاللّٰهُ يَقُوْلُ الْحَقَّ وَهُوَ يَهْدِى السَّبِيْلَ

مَا جَعَلَ
نہیں بنائے
اللّٰهُ
اللہ نے
لِرَجُلٍ
کسی شخص کے لیے
مِّنْ قَلْبَيْنِ
دو دلوں میں سے
فِيْ جَوْفِهٖ ۚ
اس کے پیٹ میں
وَمَا جَعَلَ
اور نہیں اس نے بنائیں
اَزْوَاجَكُمُ اڿ
تمہاری بیویاں وہ جو
تُظٰهِرُوْنَ
تم ظہار کرتے ہو
مِنْهُنَّ
ان سے
اُمَّهٰتِكُمْ ۚ
مائیں تمہاری
وَمَا
اور نہیں
جَعَلَ
بنایا
اَدْعِيَاۗءَكُمْ
تمہارے منہ بولے بیٹوں کو
اَبْنَاۗءَكُمْ ۭ
بیٹے تمہارے
ذٰلِكُمْ
یہ
قَوْلُكُمْ
بات ہے تمہاری
بِاَفْوَاهِكُمْ ۭ
ساتھ تمہارے مونہوں کے
وَاللّٰهُ
اور اللہ تعالیٰ
يَـقُوْلُ الْحَـقَّ
فرماتا ہے حق۔ کہتا ہے حق
وَهُوَ
اور وہی
يَهْدِي
رہنمائی کرتا ہے
السَّبِيْلَ
راستے کی۔ طریقے کی۔ (سیدھا)

اللہ نے کسی شخص کے دھڑ میں دو دِل نہیں رکھے ہیں، نہ اس نے تم لوگوں کی اُن بیویوں کو جن سے تم ظہار کرتے ہو تمہاری ماں بنا دیا ہے، اور نہ اس نے تمہارے منہ بولے بیٹوں کو تمہارا حقیقی بیٹا بنایا ہے یہ تو وہ باتیں ہیں جو تم لوگ اپنے منہ سے نکال دیتے ہو، مگر اللہ وہ بات کہتا ہے جو مبنی بر حقیقت ہے، اور وہی صحیح طریقے کی طرف رہنمائی کرتا ہے

تفسير

اُدْعُوْهُمْ لِاٰبَاۤٮِٕهِمْ هُوَ اَقْسَطُ عِنْدَ اللّٰهِ ۚ فَاِنْ لَّمْ تَعْلَمُوْۤا اٰبَاۤءَهُمْ فَاِخْوَانُكُمْ فِى الدِّيْنِ وَمَوَالِيْكُمْۗ وَ لَيْسَ عَلَيْكُمْ جُنَاحٌ فِيْمَاۤ اَخْطَأْ تُمْ بِهٖۙ وَلٰكِنْ مَّا تَعَمَّدَتْ قُلُوْبُكُمْ ۗ وَكَانَ اللّٰهُ غَفُوْرًا رَّحِيْمًا

اُدْعُوْهُمْ
پکارو ان کو
لِاٰبَاۗىِٕهِمْ
ان کے باپوں کے لیے
هُوَ اَقْسَطُ
وہ زیادہ انصاف والا ہے
عِنْدَ اللّٰهِ ۚ
اللہ کے نزدیک
فَاِنْ
پھر اگر
لَّمْ
نہیں
تَعْلَمُوْٓا
تم جانو
اٰبَاۗءَهُمْ
ان کے باپوں کو
فَاِخْوَانُكُمْ
تو بھائی ہیں تمہارے
فِي الدِّيْنِ
دین میں
وَمَوَالِيْكُمْ ۭ
اور دوست تمہارے
وَلَيْسَ
اور نہیں
عَلَيْكُمْ
تم پر
جُنَاحٌ
کوئی گناہ
فِيْمَآ
اس معاملے میں جو
اَخْطَاْتُمْ بِهٖ ۙ
خطا کی تم نے ساتھ اس کے
وَلٰكِنْ
لیکن
مَّا
جو
تَعَمَّدَتْ
جان بوجھ کر ارادہ کریں
قُلُوْبُكُمْ ۭ
دل تمہارے
وَكَانَ اللّٰهُ
اور ہے اللہ تعالیٰ
غَفُوْرًا
غفور
رَّحِـيْمًا
رحیم

منہ بولے بیٹوں کو ان کے باپوں کی نسبت سے پکارو، یہ اللہ کے نزدیک زیادہ منصفانہ بات ہے اور اگر تمہیں معلوم نہ ہو کہ ان کے باپ کون ہیں تو وہ تمہارے دینی بھائی اور رفیق ہیں نا دانستہ جو بات تم کہو اس کے لیے تم پر کوئی گرفت نہیں ہے، لیکن اُس بات پر ضرور گرفت ہے جس کا تم دل سے ارادہ کرو اللہ درگزر کرنے والا اور رحیم ہے

تفسير

اَلنَّبِىُّ اَوْلٰى بِالْمُؤْمِنِيْنَ مِنْ اَنْفُسِهِمْ وَاَزْوَاجُهٗۤ اُمَّهٰتُهُمْ ۗ وَاُولُوا الْاَرْحَامِ بَعْضُهُمْ اَوْلٰى بِبَعْضٍ فِىْ كِتٰبِ اللّٰهِ مِنَ الْمُؤْمِنِيْنَ وَالْمُهٰجِرِيْنَ اِلَّاۤ اَنْ تَفْعَلُوْۤا اِلٰۤى اَوْلِيٰۤٮِٕكُمْ مَّعْرُوْفًا ۗ كَانَ ذٰ لِكَ فِى الْكِتٰبِ مَسْطُوْرًا

اَلنَّبِيُّ
نبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)
اَوْلٰى بالْمُؤْمِنِيْنَ
قریب تر ہیں مومنوں کے
مِنْ اَنْفُسِهِمْ
ان کے نفسوں سے (بڑھ کر)
وَاَزْوَاجُهٗٓ
اور آپ کی بیویاں
اُمَّهٰتُهُمْ ۭ
ان کی مائیں ہیں
وَاُولُوا الْاَرْحَامِ
اور رحم والے (رشتہ دار)
بَعْضُهُمْ
ان میں سے بعض
اَوْلٰى
نزدیک تر ہیں
بِبَعْضٍ
بعض کے
فِيْ كِتٰبِ اللّٰهِ
اللہ کی کتاب میں
مِنَ الْمُؤْمِنِيْنَ
مومنوں میں سے
وَالْمُهٰجِرِيْنَ
اور مہاجرین میں سے
اِلَّآ
مگر
اَنْ تَفْعَلُوْٓا
یہ کہ تم کرو
اِلٰٓى اَوْلِيٰۗىِٕكُمْ
طرف اپنے دوستوں کے
مَّعْرُوْفًا ۭ
کوئی بھلائی
كَانَ ذٰلِكَ
ہے یہ بات
فِي الْكِتٰبِ
کتاب میں
مَسْطُوْرًا
لکھی ہوئی

بلاشبہ نبی تو اہل ایمان کے لیے اُن کی اپنی ذات پر مقدم ہے، اور نبی کی بیویاں اُن کی مائیں ہیں، مگر کتاب اللہ کی رو سے عام مومنین و مہاجرین کی بہ نسبت رشتہ دار ایک دوسرے کے زیادہ حقدار ہیں، البتہ اپنے رفیقوں کے ساتھ تم کوئی بھلائی (کرنا چاہو تو) کر سکتے ہو یہ حکم کتاب الٰہی میں لکھا ہوا ہے

تفسير

وَاِذْ اَخَذْنَا مِنَ النَّبِيّٖنَ مِيْثَاقَهُمْ وَمِنْكَ وَمِنْ نُّوْحٍ وَّاِبْرٰهِيْمَ وَمُوْسٰى وَعِيْسَى ابْنِ مَرْيَمَۖ وَاَخَذْنَا مِنْهُمْ مِّيْثَا قًا غَلِيْظًا ۙ

وَاِذْ اَخَذْنَا
اور جب لیا ہم نے
مِنَ النَّـبِيّٖنَ
نبیوں سے
مِيْثَاقَهُمْ
پختہ عہد ان کا
وَمِنْكَ
اور آپ سے
وَمِنْ نُّوْحٍ
اور نوح سے
وَّاِبْرٰهِيْمَ
اور ابراہیم سے
وَمُوْسٰى
اور موسیٰ سے
وَعِيْسَى ابْنِ مَرْيَمَ ۠
اور عیسیٰ ابن مریم سے
وَاَخَذْنَا مِنْهُمْ
اور لیا ہم نے ان سے
مِّيْثَاقًا غَلِيْظًا
عہد پختہ۔ پکا

اور (اے نبیؐ) یاد رکھو اُس عہد و پیمان کو جو ہم نے سب پیغمبروں سے لیا ہے، تم سے بھی اور نوحؑ اور ابراہیمؑ اور موسیٰؑ اور عیسیٰؑ ابن مریم سے بھی سب سے ہم پختہ عہد لے چکے ہیں

تفسير

لِّيَسْئَلَ الصّٰدِقِيْنَ عَنْ صِدْقِهِمْۚ وَاَعَدَّ لِلْكٰفِرِيْنَ عَذَابًا اَ لِيْمًا

لِّيَسْـَٔـلَ الصّٰدِقِيْنَ
تاکہ وہ سوال کرے سچوں سے
عَنْ صِدْقِهِمْ ۚ
ان کے سچ کے بارے میں
وَاَعَدَّ
اور اس نے تیار کیا
لِلْكٰفِرِيْنَ
کافروں کے لیے
عَذَابًا اَلِـــيْمًا
عذاب دردناک

تاکہ سچے لوگوں سے (ان کا رب) ان کی سچائی کے بارے میں سوال کرے، اور کافروں کے لیے تو اس نے درد ناک عذاب مہیا کر ہی رکھا ہے

تفسير

يٰۤـاَيُّهَا الَّذِيْنَ اٰمَنُوا اذْكُرُوْا نِعْمَةَ اللّٰهِ عَلَيْكُمْ اِذْ جَاۤءَتْكُمْ جُنُوْدٌ فَاَرْسَلْنَا عَلَيْهِمْ رِيْحًا وَّجُنُوْدًا لَّمْ تَرَوْهَا ۗ وَكَانَ اللّٰهُ بِمَا تَعْمَلُوْنَ بَصِيْرًا ۚ

يٰٓاَيُّهَا الَّذِيْنَ اٰمَنُوا
اے وہ لوگو جو ایمان لائے ہو
اذْكُرُوْا
یاد کرو
نِعْمَةَ اللّٰهِ
اللہ کی نعمت کو
عَلَيْكُمْ
جو تم پر ہے
اِذْ جَاۗءَتْكُمْ
جب آئے تمہارے پاس
جُنُوْدٌ
لشکر
فَاَرْسَلْنَا
تو بھیجی ہم نے
عَلَيْهِمْ
ان پر
رِيْحًا
ایک آندھی۔ ہوا
وَّجُنُوْدًا
اور کچھ لشکر
لَّمْ تَرَوْهَا ۭ
نہیں تم نے دیکھا ان کو
وَكَانَ اللّٰهُ
اور ہے اللہ تعالیٰ
بِمَا تَعْمَلُوْنَ
ساتھ اس کے جو تم عمل کرتے ہو
بَصِيْرًا
دیکھنے والا

اے لوگو، جو ایمان لائے ہو، یاد کرو اللہ کے احسان کو جو (ابھی ابھی) اُس نے تم پر کیا ہے جب لشکر تم پر چڑھ آئے تو ہم نے اُن پر ایک سخت آندھی بھیج دی اور ایسی فوجیں روانہ کیں جو تم کو نظر نہ آتی تھیں اللہ وہ سب کچھ دیکھ رہا تھا جو تم لوگ اس وقت کر رہے تھے

تفسير

اِذْ جَاۤءُوْكُمْ مِّنْ فَوْقِكُمْ وَمِنْ اَسْفَلَ مِنْكُمْ وَاِذْ زَاغَتِ الْاَبْصَارُ وَبَلَغَتِ الْقُلُوْبُ الْحَـنَـاجِرَ وَتَظُنُّوْنَ بِاللّٰهِ الظُّنُوْنَا ۗ

اِذْ جَاۗءُوْكُمْ
جب وہ آئے تمہارے پاس
مِّنْ فَوْقِكُمْ
تمہارے اوپر سے
وَمِنْ اَسْفَلَ مِنْكُمْ
اور تمہارے نیچے کی طرف سے
وَاِذْ
اور جب
زَاغَتِ الْاَبْصَارُ
کج ہوگئیں نگاہیں۔ پھر گئیں نگاہیں
وَبَلَغَتِ الْقُلُوْبُ
اور پہنچ گئے دل
الْحَـنَاجِرَ
حلق کو
وَتَظُنُّوْنَ
اور تم گمان کر رہے تھے
بِاللّٰهِ الظُّنُوْنَا
اللہ کے بارے میں بہت سے گمان

جب وہ اُوپر سے اور نیچے سے تم پر چڑھ آئے جب خوف کے مارے آنکھیں پتھرا گئیں، کلیجے منہ کو آ گئے، اور تم لوگ اللہ کے بارے میں طرح طرح کے گمان کرنے لگے

تفسير
کے بارے میں معلومات :
الاحزاب
القرآن الكريم:الأحزاب
آية سجدہ (سجدة):-
سورۃ کا نام (latin):Al-Ahzab
سورہ نمبر:33
کل آیات:73
کل کلمات:1280
کل حروف:5790
کل رکوعات:9
مقام نزول:مدینہ منورہ
ترتیب نزولی:90
آیت سے شروع:3533