Skip to main content
ARBNDEENIDTRUR
bismillah

تَبٰرَكَ الَّذِىْ بِيَدِهِ الْمُلْكُۖ وَهُوَ عَلٰى كُلِّ شَىْءٍ قَدِيْرُۙ

تَبٰرَكَ الَّذِيْ
بہت بابرکت ہے وہ ذات
بِيَدِهِ
جس کے ہاتھ میں ہے
الْمُلْكُ
ساری بادشاہت
وَهُوَ
اور وہ
عَلٰي كُلِّ شَيْءٍ
ہر چیز پر
قَدِيْرُۨ
قدرت رکھنے والا ہے

نہایت بزرگ و برتر ہے وہ جس کے ہاتھ میں کائنات کی سلطنت ہے، اور وہ ہر چیز پر قدرت رکھتا ہے

تفسير

لَّذِىْ خَلَقَ الْمَوْتَ وَالْحَيٰوةَ لِيَبْلُوَكُمْ اَيُّكُمْ اَحْسَنُ عَمَلًا ۗ وَهُوَ الْعَزِيْزُ الْغَفُوْرُۙ

الَّذِيْ
جس نے
خَلَقَ الْمَوْتَ
پیدا کیا موت کو
وَالْحَيٰوةَ
اور زندگی کو
لِيَبْلُوَكُمْ
تاکہ آزمائے تم کو
اَيُّكُمْ
کون ساتم میں سے
اَحْسَنُ عَمَلًا
زیادہ اچھا ہے عمل میں
وَهُوَ الْعَزِيْزُ
اور وہ زبردست ہے
الْغَفُوْرُ
بخشش کرنے والا ہے

جس نے موت اور زندگی کو ایجاد کیا تاکہ تم لوگوں کو آزما کر دیکھے تم میں سے کون بہتر عمل کرنے والا ہے، اور وہ زبردست بھی ہے اور درگزر فرمانے والا بھی

تفسير

الَّذِىْ خَلَقَ سَبْعَ سَمٰوٰتٍ طِبَاقًا ۗ مَا تَرٰى فِىْ خَلْقِ الرَّحْمٰنِ مِنْ تَفٰوُتٍ ۗ فَارْجِعِ الْبَصَرَۙ هَلْ تَرٰى مِنْ فُطُوْرٍ

الَّذِيْ
جس نے
خَلَقَ
بنائے
سَبْعَ سَمٰوٰتٍ
سات آسمان
طِبَاقًا
اوپر تلے۔ تہ بہ تہ
مَا تَرٰى
نہ تم دیکھو گے
فِيْ خَلْقِ الرَّحْمٰنِ
رحمن کی تخلیق میں
مِنْ تَفٰوُتٍ
کوئی نقص۔ کجی۔ خلل
فَارْجِعِ الْبَصَرَ
پھر لوٹاؤ نگاہ کو
هَلْ تَرٰى
کیا تم دیکھتے ہو
مِنْ فُطُوْرٍ
کوئی شگاف۔ کوئی رخنہ

جس نے تہ بر تہ سات آسمان بنائے تم رحمان کی تخلیق میں کسی قسم کی بے ربطی نہ پاؤ گے پھر پلٹ کر دیکھو، کہیں تمہیں کوئی خلل نظر آتا ہے؟

تفسير

ثُمَّ ارْجِعِ الْبَصَرَ كَرَّتَيْنِ يَنْقَلِبْ اِلَيْكَ الْبَصَرُ خَاسِئًا وَّهُوَ حَسِيْرٌ

ثُمَّ ارْجِعِ
پھر لوٹاؤ
الْبَصَرَ
نگاہ کو
كَرَّتَيْنِ
بار بار
يَنْقَلِبْ
لوٹ آئے گی
اِلَيْكَ الْبَصَرُ
تیری طرف نگاہ
خَاسِئًا
ذلیل ہوکر۔ عاجز ہو کر
وَّهُوَ حَسِيْرٌ
اور وہ تھکی ہوئی ہوگی

بار بار نگاہ دوڑاؤ تمہاری نگاہ تھک کر نامراد پلٹ آئے گی

تفسير

وَلَـقَدْ زَيَّـنَّا السَّمَاۤءَ الدُّنْيَا بِمَصَابِيْحَ وَجَعَلْنٰهَا رُجُوْمًا لِّلشَّيٰطِيْنِ وَاَعْتَدْنَا لَهُمْ عَذَابَ السَّعِيْرِ

وَلَقَدْ
اور البتہ تحقیق
زَيَّنَّا
زینت دی ہم نے۔ خوب صورت بنایا ہم نے
السَّمَاۗءَ الدُّنْيَا
آسمان دنیا کو
بِمَصَابِيْحَ
چراغوں کے ساتھ
وَجَعَلْنٰهَا
اور بنایا ہم نے ان کو
رُجُوْمًا
مارنے کی چیز
لِّلشَّـيٰطِيْنِ
شیطانوں کے لیے
وَاَعْتَدْنَا
اور تیار کیا ہم نے
لَهُمْ
ان کے لیے
عَذَابَ السَّعِيْرِ
جلنے کا عذاب

ہم نے تمہارے قریب کے آسمان کو عظیم الشان چراغوں سے آراستہ کیا ہے اور اُنہیں شیاطین کو مار بھگانے کا ذریعہ بنا دیا ہے اِن شیطانوں کے لیے بھڑکتی ہوئی آگ ہم نے مہیا کر رکھی ہے

تفسير

وَلِلَّذِيْنَ كَفَرُوْا بِرَبِّهِمْ عَذَابُ جَهَنَّمَۗ وَبِئْسَ الْمَصِيْرُ

وَلِلَّذِيْنَ كَفَرُوْا
اور ان لوگوں کے لیے جنہوں نے کفر کیا
بِرَبِّهِمْ
اپنے رب کے ساتھ
عَذَابُ
عذاب ہے
جَهَنَّمَ
جہنم کا
وَبِئْسَ الْمَصِيْرُ
اور کتنا برا ہے ٹھکانہ۔ لوٹنے کی جگہ

جن لوگوں نے اپنے رب سے کفر کیا ان کے لیے جہنم کا عذاب ہے اور وہ بہت ہی برا ٹھکانا ہے

تفسير

اِذَاۤ اُلْقُوْا فِيْهَا سَمِعُوْا لَهَا شَهِيْقًا وَّهِىَ تَفُوْرُۙ

اِذَآ اُلْقُوْا
جب وہ ڈالیں جائیں گے
فِيْهَا
اس میں
سَمِعُوْا
سنیں گے
لَهَا
واسطے اس کے
شَهِيْقًا
چلانا
وَّهِىَ تَفُوْرُ
اور وہ جوش کھارہی ہوگی

جب وہ اُس میں پھینکے جائیں گے تو اسکے دھاڑنے کی ہولناک آواز سنیں گے اور وہ جوش کھا رہی ہوگی

تفسير

تَكَادُ تَمَيَّزُ مِنَ الْغَيْظِۗ كُلَّمَاۤ اُلْقِىَ فِيْهَا فَوْجٌ سَاَلَهُمْ خَزَنَـتُهَاۤ اَلَمْ يَأْتِكُمْ نَذِيْرٌ

تَكَادُ
قریب ہے کہ
تَمَــيَّزُ
پھٹ جائے
مِنَ الْغَيْظِ
غضب سے۔ غصے سے
كُلَّمَآ
جب کبھی
اُلْقِيَ فِيْهَا
ڈالی جائے گی اس میں
فَوْجٌ
کوئی فوج۔ لوگوں کا گروہ
سَاَلَهُمْ
پوچھیں گے ان سے
خَزَنَــتُهَآ
ان کے داروغہ۔ چوکیدار
اَلَمْ يَاْتِكُمْ
کیا نہیں آیا تھا تمہارے پاس
نَذِيْرٌ
کوئی ڈرانے والا

شدت غضب سے پھٹی جاتی ہو گی ہر بار جب کوئی انبوہ اس میں ڈالا جائے گا، اُس کے کارندے اُن لوگوں سے پوچھیں گے "کیا تمہارے پاس کوئی خبردار کرنے والا نہیں آیا تھا؟"

تفسير

قَالُوْا بَلٰى قَدْ جَاۤءَنَا نَذِيْرٌ ۙ فَكَذَّبْنَا وَقُلْنَا مَا نَزَّلَ اللّٰهُ مِنْ شَىْءٍ ۖ اِنْ اَنْتُمْ اِلَّا فِىْ ضَلٰلٍ كَبِيْرٍ

قَالُوْا
وہ کہیں گے
بَلٰي
کیوں نہیں
قَدْ جَاۗءَنَا
تحقیق آیا ہمارے پاس
نَذِيْرٌ
ڈرانے والا
فَكَذَّبْنَا
تو جھٹلادیا ہم نے
وَقُلْنَا
اور کہا ہم نے
مَا نَزَّلَ اللّٰهُ
نہیں نازل کی اللہ نے
مِنْ شَيْءٍ
کوئی چیز
اِنْ اَنْتُمْ
نہیں تم
اِلَّا
مگر
فِيْ
میں
ضَلٰلٍ كَبِيْرٍ
بڑی گمراہی

وہ جواب دیں گے "ہاں، خبردار کرنے والا ہمارے پاس آیا تھا، مگر ہم نے اسے جھٹلا دیا اور کہا اللہ نے کچھ بھی نازل نہیں کیا ہے، تم بڑی گمراہی میں پڑے ہوئے ہو"

تفسير

وَقَالُوْا لَوْ كُنَّا نَسْمَعُ اَوْ نَعْقِلُ مَا كُنَّا فِىْۤ اَصْحٰبِ السَّعِيْرِ

وَقَالُوْا
اور وہ کہیں گے
لَوْ كُنَّا
کاش ہم ہوتے
نَسْمَعُ
ہم سنتے
اَوْ نَعْقِلُ
یا ہم سمجھتے ہوتے
مَا
نہ
كُنَّا
ہوتے ہم
فِيْٓ اَصْحٰبِ السَّعِيْرِ
دوزخ والوں میں سے

اور وہ کہیں گے "کاش ہم سنتے یا سمجھتے تو آج اِس بھڑکتی ہوئی آگ کے سزا واروں میں نہ شامل ہوتے"

تفسير
کے بارے میں معلومات :
الملک
القرآن الكريم:الملك
آية سجدہ (سجدة):-
سورۃ کا نام (latin):Al-Mulk
سورہ نمبر:67
کل آیات:30
کل کلمات:330
کل حروف:1313
کل رکوعات:2
مقام نزول:مکہ مکرمہ
ترتیب نزولی:77
آیت سے شروع:5241