Skip to main content
ARBNDEENIDTRUR
bismillah

يٰۤاَيُّهَا النَّبِىُّ اِذَا طَلَّقْتُمُ النِّسَاۤءَ فَطَلِّقُوْهُنَّ لِعِدَّتِهِنَّ وَاَحْصُوا الْعِدَّةَ ۚ وَاتَّقُوا اللّٰهَ رَبَّكُمْ ۚ لَا تُخْرِجُوْهُنَّ مِنْۢ بُيُوْتِهِنَّ وَلَا يَخْرُجْنَ اِلَّاۤ اَنْ يَّأْتِيْنَ بِفَاحِشَةٍ مُّبَيِّنَةٍ ۗ وَتِلْكَ حُدُوْدُ اللّٰهِ ۗ وَمَنْ يَّتَعَدَّ حُدُوْدَ اللّٰهِ فَقَدْ ظَلَمَ نَفْسَهٗ ۗ لَا تَدْرِىْ لَعَلَّ اللّٰهَ يُحْدِثُ بَعْدَ ذٰلِكَ اَمْرًا

يٰٓاَيُّهَا النَّبِيُّ
اے نبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)
اِذَا طَلَّقْتُمُ
جب طلاق دو تم
النِّسَاۗءَ
عورتوں کو
فَطَلِّقُوْهُنَّ
تو طلاق دو ان کو
لِعِدَّتِهِنَّ
ان کی عدت کے لیے
وَاَحْصُوا
اور شمار کرو۔ گن لو
الْعِدَّةَ
عدت کو
وَاتَّقُوا اللّٰهَ
اور ڈرو اللہ سے
رَبَّكُمْ
جو رب ہے تمہارا
لَا تُخْرِجُوْهُنَّ
نہ تم نکالو ان کو
مِنْۢ بُيُوْتِهِنَّ
ان کے گھروں سے
وَلَا يَخْرُجْنَ
اور نہ وہ نکلیں
اِلَّآ
مگر
اَنْ يَّاْتِيْنَ
یہ کہ وہ آئیں
بِفَاحِشَةٍ
بےحیائی کو
مُّبَيِّنَةٍ
کھلی
وَتِلْكَ
اور یہ
حُدُوْدُ اللّٰهِ
اللہ کی حدود ہیں
وَمَنْ يَّتَعَدَّ
اور جو تجاوز کرے گا
حُدُوْدَ اللّٰهِ
اللہ کی حدود سے
فَقَدْ
تو تحقیق
ظَلَمَ نَفْسَهٗ
اس نے ظلم کیا اپنی جان پر
لَا تَدْرِيْ
نہیں تم جانتے
لَعَلَّ اللّٰهَ
شاید کہ اللہ تعالیٰ
يُحْدِثُ
پیدا کردے
بَعْدَ
بعد
ذٰلِكَ
اس کے
اَمْرًا
کوئی صورت

اے نبیؐ، جب تم لوگ عورتوں کو طلاق دو تو اُنہیں اُن کی عدت کے لیے طلاق دیا کرو اور عدت کے زمانے کا ٹھیک ٹھیک شمار کرو، اور اللہ سے ڈرو جو تمہارا رب ہے (زمانہ عدت میں) نہ تم اُنہیں اُن کے گھروں سے نکالو اور نہ وہ خود نکلیں، الا یہ کہ وہ کسی صریح برائی کی مرتکب ہوں یہ اللہ کی مقرر کردہ حدیں ہیں، اور جو کوئی اللہ کی حدوں سے تجاوز کرے گا وہ اپنے اوپر خود ظلم کرے گا تم نہیں جانتے، شاید اس کے بعد اللہ (موافقت کی) کوئی صورت پیدا کر دے

تفسير

فَاِذَا بَلَغْنَ اَجَلَهُنَّ فَاَمْسِكُوْهُنَّ بِمَعْرُوْفٍ اَوْ فَارِقُوْهُنَّ بِمَعْرُوْفٍ وَّاَشْهِدُوْا ذَوَىْ عَدْلٍ مِّنْكُمْ وَاَقِيْمُوا الشَّهَادَةَ لِلّٰهِ ۗ ذٰ لِكُمْ يُوْعَظُ بِهٖ مَنْ كَانَ يُؤْمِنُ بِاللّٰهِ وَالْيَوْمِ الْاٰخِرِ ۙ وَمَنْ يَّـتَّـقِ اللّٰهَ يَجْعَلْ لَّهٗ مَخْرَجًا ۙ

فَاِذَا بَلَغْنَ
پھر جب وہ پہنچیں
اَجَلَهُنَّ
اپنی مدت کو
فَاَمْسِكُوْهُنَّ
تو روک لو ان کو
بِمَعْرُوْفٍ
بھلے طریقے سے
اَوْ فَارِقُوْهُنَّ
یا جدا کردو ان کو
بِمَعْرُوْفٍ
ساتھ بھلے طریقے کے
وَّاَشْهِدُوْا
اور گواہ بنا لو
ذَوَيْ عَدْلٍ
دو عدل والوں کو
مِّنْكُمْ
تم میں سے
وَاَقِيْمُوا
اور قائم کرو
الشَّهَادَةَ
گواہی کو
لِلّٰهِ
اللہ ہیں کے لیے
ذٰلِكُمْ يُوْعَظُ
یہ بات نصیحت کی جاتی ہے
بِهٖ
ساتھ اس کے
مَنْ كَانَ
اسے جو کوئی ہو
يُؤْمِنُ
ایمان رکھتا ہے
بِاللّٰهِ
اللہ پر
وَالْيَوْمِ الْاٰخِرِ
اور یوم آخرت پر
وَمَنْ يَّتَّقِ اللّٰهَ
اور جو ڈرے گا اللہ سے
يَجْعَلْ لَّهٗ
وہ پیدا کردے گا اس کے لیے
مَخْرَجًا
نکلنے کا راستہ

پھر جب وہ اپنی (عدت کی) مدت کے خاتمہ پر پہنچیں تو یا انہیں بھلے طریقے سے (اپنے نکاح میں) روک ر کھو، یا بھلے طریقے پر اُن سے جدا ہو جاؤ اور دو ایسے آدمیوں کو گواہ بنا لو جو تم میں سے صاحب عدل ہوں اور (اے گواہ بننے والو) گواہی ٹھیک ٹھیک اللہ کے لیے ادا کرو یہ باتیں ہیں جن کی تم لوگوں کو نصیحت کی جاتی ہے، ہر اُس شخص کو جو اللہ اور آخرت کے دن پر ایمان رکھتا ہو جو کوئی اللہ سے ڈرتے ہوئے کام کرے گا اللہ اُس کے لیے مشکلات سے نکلنے کا کوئی راستہ پیدا کر دے گا

تفسير

وَّيَرْزُقْهُ مِنْ حَيْثُ لَا يَحْتَسِبُ ۗ وَمَنْ يَّتَوَكَّلْ عَلَى اللّٰهِ فَهُوَ حَسْبُهٗ ۗ اِنَّ اللّٰهَ بَالِغُ اَمْرِهٖ ۗ قَدْ جَعَلَ اللّٰهُ لِكُلِّ شَىْءٍ قَدْرًا

وَّيَرْزُقْهُ
اور رزق دے گا اس کو
مِنْ حَيْثُ لَا
جہاں سے، نہ
يَحْتَسِبُ
وہ گمان کرتا ہوگا
وَمَنْ يَّتَوَكَّلْ
اور جو بھروسہ کرے گا
عَلَي اللّٰهِ
اللہ پر
فَهُوَ حَسْبُهٗ
تو وہ کافی ہے اس کو
اِنَّ اللّٰهَ
بیشک اللہ تعالیٰ
بَالِغُ اَمْرِهٖ
پہنچنے والا ہے اپنے حکم کو
قَدْ جَعَلَ اللّٰهُ
تحقیق بنادیا اللہ نے
لِكُلِّ شَيْءٍ
ہر چیز کے لیے
قَدْرًا
ایک اندازہ

اور اسے ایسے راستے سے رزق دے گا جدھر اُس کا گمان بھی نہ جاتا ہو جو اللہ پر بھروسا کرے اس کے لیے وہ کافی ہے اللہ اپنا کام پورا کر کے رہتا ہے اللہ نے ہر چیز کے لیے ایک تقدیر مقرر کر رکھی ہے

تفسير

وَالّۤـٰـئِـيْ يَٮِٕسْنَ مِنَ الْمَحِيْضِ مِنْ نِّسَاۤٮِٕكُمْ اِنِ ارْتَبْتُمْ فَعِدَّتُهُنَّ ثَلٰثَةُ اَشْهُرٍ ۙ وَّالّۤـٰـئِـيْ لَمْ يَحِضْنَ ۗ وَاُولَاتُ الْاَحْمَالِ اَجَلُهُنَّ اَنْ يَّضَعْنَ حَمْلَهُنَّ ۗ وَمَنْ يَّـتَّـقِ اللّٰهَ يَجْعَلْ لَّهٗ مِنْ اَمْرِهٖ یُسْرًا

وَاڿ يَىِٕسْنَ
اور وہ عورتیں جو مایوس ہوچکی ہوں
مِنَ الْمَحِيْضِ
حیض سے
مِنْ نِّسَاۗىِٕكُمْ
تمہاری عورتوں میں سے
اِنِ ارْتَبْتُمْ
اگر شک ہو تم کو
فَعِدَّتُهُنَّ
تو ان کی عدت
ثَلٰثَةُ اَشْهُرٍ
تین مہینے ہے
وَّاڿ لَمْ
اور وہ عورتیں ، نہیں
يَحِضْنَ
جنہیں ابھی حیض آیا ہو۔ جو حائضہ ہوئی ہوں
وَاُولَاتُ الْاَحْمَالِ
اور حمل والیاں
اَجَلُهُنَّ
ان کی عدت
اَنْ
کہ
يَّضَعْنَ حَمْلَهُنَّ
وہ رکھ دیں اپنا حمل
وَمَنْ يَّتَّقِ اللّٰهَ
اور جو ڈرے گا اللہ سے
يَجْعَلْ لَّهٗ
وہ کردے گا اس کے لیے
مِنْ اَمْرِهٖ
اس کے کام میں
يُسْرًا
آسانی

اور تمہاری عورتوں میں سے جو حیض سے مایوس ہو چکی ہوں ان کے معاملہ میں اگر تم لوگوں کو کوئی شک لاحق ہے تو (تمہیں معلوم ہو کہ) ان کی عدت تین مہینے ہے اور یہی حکم اُن کا ہے جنہیں ابھی حیض نہ آیا ہو اور حاملہ عورتوں کی عدت کی حد یہ ہے کہ اُن کا وضع حمل ہو جائے جو شخص اللہ سے ڈرے اُس کے معاملہ میں وہ سہولت پیدا کر دیتا ہے

تفسير

ذٰلِكَ اَمْرُ اللّٰهِ اَنْزَلَهٗۤ اِلَيْكُمْ ۗ وَمَنْ يَّـتَّـقِ اللّٰهَ يُكَفِّرْ عَنْهُ سَيِّاٰتِهٖ وَيُعْظِمْ لَهٗۤ اَجْرًا

ذٰلِكَ اَمْرُ اللّٰهِ
یہ اللہ کا حکم ہے
اَنْزَلَهٗٓ
اس نے نازل کیا ہے اس کو
اِلَيْكُمْ
تمہاری طرف
وَمَنْ يَّتَّقِ اللّٰهَ
اور جو ڈرے گا اللہ سے
يُكَفِّرْ عَنْهُ
وہ دور کردے گا اس سے
سَـيِّاٰتِهٖ
اس کی برائیاں
وَيُعْظِمْ
اور بڑا کردے گا
لَهٗٓ
اس کے لیے
اَجْرًا
اجر کو

یہ اللہ کا حکم ہے جو اُس نے تمہاری طرف نازل کیا ہے جو اللہ سے ڈرے گا اللہ اس کی برائیوں کو اس سے دور کر دے گا اور اس کو بڑا اجر دے گا

تفسير

اَسْكِنُوْهُنَّ مِنْ حَيْثُ سَكَنْـتُمْ مِّنْ وُّجْدِكُمْ وَلَا تُضَاۤرُّوْهُنَّ لِتُضَيِّقُوْا عَلَيْهِنَّ ۗ وَاِنْ كُنَّ اُولَاتِ حَمْلٍ فَاَنْفِقُوا عَلَيْهِنَّ حَتّٰى يَضَعْنَ حَمْلَهُنَّ ۚ فَاِنْ اَرْضَعْنَ لَـكُمْ فَاٰ تُوْهُنَّ اُجُوْرَهُنَّ ۚ وَأْتَمِرُوْا بَيْنَكُمْ بِمَعْرُوْفٍۚ وَاِنْ تَعَاسَرْتُمْ فَسَتُرْضِعُ لَهٗۤ اُخْرٰى ۗ

اَسْكِنُوْهُنَّ
بساؤ ان عورتوں کو
مِنْ حَيْثُ
جہاں
سَكَنْتُمْ
تم رہتے ہو
مِّنْ وُّجْدِكُمْ
اپنی دست کے مطابق
وَلَا تُضَاۗرُّوْهُنَّ
اور نہ تم ضرر پہنچاؤ ان کو
لِتُضَيِّقُوْا
تاکہ تم تنگ کرو۔ تنگی کرو
عَلَيْهِنَّ
ان پر
وَاِنْ كُنَّ
اور اگر ہوں
اُولَاتِ حَمْلٍ
حمل والیاں
فَاَنْفِقُوْا
تو خرچ کرو
عَلَيْهِنَّ
ان پر
حَتّٰى يَضَعْنَ
یہاں تک کہ وہ رکھ دیں
حَمْلَهُنَّ
حمل اپنا
فَاِنْ اَرْضَعْنَ
پھر اگر وہ دودھ پلائیں
لَكُمْ
تمہارے لیے
فَاٰتُوْهُنَّ
تو دے دو ان کو
اُجُوْرَهُنَّ
ان کے اجر
وَاْتَمِرُوْا
اور معاملہ کرو
بَيْنَكُمْ
آپس میں
بِمَعْرُوْفٍ
بھلے طریقے سے
وَاِنْ
اور اگر
تَعَاسَرْتُمْ
آپس میں کشمش کرو تم
فَسَتُرْضِعُ
تو دودھ پلا دے
لَهٗٓ اُخْرٰى
اس کے لیے کوئی دوسری

اُن کو (زمانہ عدت میں) اُسی جگہ رکھو جہاں تم رہتے ہو، جیسی کچھ بھی جگہ تمہیں میسر ہو اور انہیں تنگ کرنے کے لیے ان کو نہ ستاؤ اور اگر وہ حاملہ ہوں تو ان پر اُس وقت تک خرچ کرتے رہو جب تک ان کا وضع حمل نہ ہو جائے پھر اگر وہ تمہارے لیے (بچے کو) دودھ پلائیں تو ان کی اجرت انہیں دو، اور بھلے طریقے سے (اجرت کا معاملہ) باہمی گفت و شنید سے طے کر لو لیکن اگر تم نے (اجرت طے کرنے میں) ایک دوسرے کو تنگ کیا تو بچے کو کوئی اور عورت دودھ پلا لے گی

تفسير

لِيُنْفِقْ ذُوْ سَعَةٍ مِّنْ سَعَتِهٖۗ وَمَنْ قُدِرَ عَلَيْهِ رِزْقُهٗ فَلْيُنْفِقْ مِمَّاۤ اٰتٰٮهُ اللّٰهُۗ لَا يُكَلِّفُ اللّٰهُ نَفْسًا اِلَّا مَاۤ اٰتٰٮهَاۗ سَيَجْعَلُ اللّٰهُ بَعْدَ عُسْرٍ يُّسْرًا

لِيُنْفِقْ
تاکہ خرچ کرے
ذُوْ سَعَةٍ
وسعت والا
مِّنْ سَعَتِهٖ
اپنی وسعت میں سے
وَمَنْ قُدِرَ
اور جو کوئی تنگ کیا گیا
عَلَيْهِ
اس پر
رِزْقُهٗ
اس کا رزق
فَلْيُنْفِقْ
پس چاہیے کہ خرچ کرے
مِمَّآ اٰتٰىهُ اللّٰهُ
اس میں سے جو عطا کیا اس کو اللہ نے
لَا يُكَلِّفُ اللّٰهُ
نہیں تکلیف دیتا اللہ
نَفْسًا
کسی شخص کو
اِلَّا مَآ اٰتٰىهَا
مگر جتنا دیا اس نے اس کو
سَيَجْعَلُ اللّٰهُ
عنقریب کردے گا اللہ
بَعْدَ عُسْرٍ
تنگی کے بعد
يُّسْرًا
آسانی

خوشحال آدمی اپنی خوشحالی کے مطابق نفقہ دے، اور جس کو رزق کم دیا گیا ہو وہ اُسی مال میں سے خرچ کرے جو اللہ نے اسے دیا ہے اللہ نے جس کو جتنا کچھ دیا ہے اس سے زیادہ کا وہ اُسے مکلف نہیں کرتا بعید نہیں کہ اللہ تنگ دستی کے بعد فراخ دستی بھی عطا فرما دے

تفسير

وَكَاَيِّنْ مِّنْ قَرْيَةٍ عَتَتْ عَنْ اَمْرِ رَبِّهَا وَرُسُلِهٖ فَحَاسَبْنٰهَا حِسَابًا شَدِيْدًاۙ وَّعَذَّبْنٰهَا عَذَابًا نُّكْرًا

وَكَاَيِّنْ
اور کتنی ہی
مِّنْ قَرْيَةٍ
بستیوں میں سے
عَتَتْ
انہوں نے سرکشی کی
عَنْ اَمْرِ رَبِّهَا
اپنے رب کے حکم سے
وَرُسُلِهٖ
اور اس کے رسولوں سے
فَحَاسَبْنٰهَا
تو حساب لیا ہم نے اس سے
حِسَابًا
حساب
شَدِيْدًا
سخت
وَّعَذَّبْنٰهَا
اور عذاب دیا ہم نے اس کو
عَذَابًا نُّكْرًا
عذاب سخت

کتنی ہی بستیاں ہیں جنہوں نے اپنے رب اور اس کے رسولوں کے حکم سے سرتابی کی تو ہم نے ان سے سخت محاسبہ کیا اور ان کو بری طرح سزا دی

تفسير

فَذَاقَتْ وَبَالَ اَمْرِهَا وَكَانَ عَاقِبَةُ اَمْرِهَا خُسْرًا

فَذَاقَتْ
تو اس نے چکھا
وَبَالَ
وبال
اَمْرِهَا
اپنے کام کا
وَكَانَ عَاقِبَةُ
اور ہے انجام
اَمْرِهَا
اس کے کام کا
خُسْرًا
ناکامی

انہوں نے اپنے کیے کا مزا چکھ لیا اور اُن کا انجام کار گھاٹا ہی گھاٹا ہے

تفسير

اَعَدَّ اللّٰهُ لَهُمْ عَذَابًا شَدِيْدًا ۙ فَاتَّقُوا اللّٰهَ يٰۤاُولِى الْاَ لْبَابِ ۛ الَّذِيْنَ اٰمَنُوْا ۛ قَدْ اَنْزَلَ اللّٰهُ اِلَيْكُمْ ذِكْرًا ۙ

اَعَدَّ اللّٰهُ
تیار کیا اللہ نے
لَهُمْ
ان کے لیے
عَذَابًا شَدِيْدًا
شدید عذاب
فَاتَّقُوا
پس ڈرو
اللّٰهَ
اللہ سے
يٰٓاُولِي الْاَلْبَابِ
اے عقل والو
الَّذِيْنَ اٰمَنُوْا
وہ جو ایمان لائے ہو
قَدْ اَنْزَلَ اللّٰهُ
تحقیق نازل کیا اللہ نے
اِلَيْكُمْ ذِكْرًا
تمہاری طرف ایک ذکر کو

اللہ نے (آخرت میں) ان کے لیے سخت عذاب مہیا کر رکھا ہے پس اللہ سے ڈرو اے صاحب عقل لوگو جو ایمان لائے ہو اللہ نے تمہاری طرف ایک نصیحت نازل کر دی ہے

تفسير
کے بارے میں معلومات :
الطلاق
القرآن الكريم:الطلاق
آية سجدہ (سجدة):-
سورۃ کا نام (latin):At-Talaq
سورہ نمبر:65
کل آیات:12
کل کلمات:249
کل حروف:1060
کل رکوعات:2
مقام نزول:مدینہ منورہ
ترتیب نزولی:99
آیت سے شروع:5217